مجلس وحدت المسلمین جنوبی پنجاب کی 26 مارچ کو منعقدہ ‘ تحفظ مزارات اولیاء کانفرنس کی تیاریاں جاری‘ سجادہ وگدی نشینوں سے ملاقاتیں


ملتان (سٹی رپورٹر)مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے زیراہتمام 26مارچ کو ملتان میں ہونے والی ’’تحفظ مزارات اولیاء اللہ (بقیہ نمبر31صفحہ12پر )
کانفرنس‘‘کی تیاریاں جاری ہیں، کانفرنس کی دعوت کے حوالے سے مجلس وحدت مسلمین کے وفود مختلف سجادہ نشین اور گدی نشینوں سے ملاقاتیں کررہے ہیں، گزشتہ روز مجلس وحدت مسلمین کے رہنماؤں نے کبیروالا، عبدالحکیم ، تلمبہ ، قتالپور،چک نورنگ شاہ، شہر سلطان،اوچشریف،شاہ جمال کا دورہ کیا۔ مجلس وحدت مسلمین کے وفود میں صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی، ڈپٹی سیکرٹری جنرل محمد عباس صدیقی، محمد اصغر تقی، ثقلین نقوی، وسیم عباس زیدی،سیکرٹری سیاسیات مہر سخاوت علی اور دیگر شریک تھے۔ مجلس وحدت مسلمین کے رہنما محمد عباس صدیقی نے دربار عبدالحکیم کے سجادہ نشین میاں عبدالخالق سے ملاقات کی اور کانفرنس میں شرکت کی دعوت دی، بعدازاں بغداد شریف میں سجادہ نشین مخدوم سید حسن جواد گیلانی سے ملاقات کی اور دربار شاہ شمس پر منعقد ہونے والے کانفرنس کی دعوت دی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے محمد عباس صدیقی کا کہنا تھا کہ موجودہ دور میں اولیاء اللہ کے مزارات دشمن کی آنکھ کا کانٹا ہیں،اسلام دشمن قوتوں نے پہلے شام اور عراق میں صحابہ کرام کے مزارات پر حملے کیے اور اب پاکستان مین اولیاء اللہ کے مزارات اُن کے نشانے پر ہیں، اُنہوں نے کہا کہ کانفرنس کا مقصدملکی موجودہ صورتحال میں اتحاد و وحدت کی فضاء کو ہموار کرنا ہے، مجلس وحدت مسلمین قومی اور ملی مفاد کے لیے اپنا کردار ادا کرتی رہے گی۔ اُنہوں نے بنوں کی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے شائع خاکروب کے اشتہار کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بنوں میں جمعیت علمائے اسلام کی حکومت ہے، مولانا فضل الرحمان کو فوری اس کا ایکشن لینا چاہیے، پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے صرف مذمت ناقابل قبول اس حوالے سے عملی اقدام کی ضرورت ہے۔