سعودی نرس نے جگر کی بیماری کا شکار بچی کو جگر کا ٹکڑا دے دیا

عرب دنیا

جدہ (اے پی پی)جگر کے عاضے کا شکار سعودی بچی کی زندگی کا چراغ اس وقت روشن ہوگیا جس اس کی دیکھ بھا ل پر معمور نرس نے ہی اپنے جگر کا ٹکڑ ا (حصہ ) دینے کی حامی بھر ی۔28 دسمبر2016کو سعودی بچی کا جگر کاٹرانسپلانٹ کیا گیا تھا۔ پرنس سلطان میڈیکل سٹی کے ڈاکٹروں نے تمام مطلوبہ ٹیسٹوں کے بعد بچی کا کامیاب آپریشن کیا۔

یورپی خاتون نے دبئی میں ایک گھنٹے کے اندر ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیوں کے تمام ریکارڈ توڑ دئیے

سعودی نرس بشیار الرشیدی نے مقامی اخبار کو بتاتے ہوئے کہا اسے بچی کا نہیں پتہ تھا تاہم جب ا س نے ٹویٹر پر پڑھا کہ ایک بچی کو جگر کا تھوڑا سا حصہ چاہیے جس کے بعد اس نے پرنس سلطان میڈیکل سٹی کے ڈاکٹروں سے رابطہ کیا اور وہاں پہنچ گئی۔ جہاں ٹرانسپلانٹ کےذریعے نرس کے جگر کا کچھ حصہ بچی کو لگادیا گیا۔ ڈاکٹروں نے میڈیا کو بتایا کہ بچی اور نرس کی حالت کافی بہتر ہے اور دونوں جلد صحت یاب ہوجائیں گی۔