دہشت گردوں کو شہداء کے خون کے ایک ایک قطرے کا حساب دینا ہوگا،شہدا کے اہل خانہ کا جذبہ ہمارے عزم کو مزید مستحکم کرتا ہے :سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان

عرب دنیا

جدہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کو شہداء کے خون کے ایک ایک قطرے کا حساب دینا ہوگا،شہدا کے اہل خانہ کا جذبہ ہمارے عزم کو مزید مستحکم کرتا ہے ۔

یہ بھی پڑھیں:ہمیں اپنے دشمنوں کے عزائم سے باخبر رہنے اور آنکھیں کھلی رکھنے کی ضرورت ہے:مفتی اعظم  شیخ عبدالعزیز آل الشیخ

عرب میڈیا کے مطابق رواں ہفتے جدہ کے السلام شاہی محل پر دہشت گردوں کے حملے میں شہید ہونے والے سپاہی عبداللہ السبیعی کے والد فیصل السبیعی سے ٹیلیفون پر تعزیت کرتے ہوئے شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ اللہ تعالیٰ آپ کو عظیم اجر سے نوازے، اس سانحہ پر ہمیں بیحد دکھ ہوا، آپ کے بیٹے نے وطن عزیز کے تحفظ کی خاطر جان کا نذرانہ پیش کیا، میں بھی آپ کا ہی ایک بیٹا ہوں، آپ کے بیٹے کا انتقام اس ملک میں پائے جانے والے ہر دہشتگرد اور انتہا پسند سے لونگا، دہشت گردوں کو شہداء کے خون کے ایک ایک قطرے کا حساب دینا ہوگا۔واضح رہے کہ ہفتے کے روز جدہ کے ایک شاہی محل پر دہشت گردوں نے حملہ کردیا تھا جس کے نتیجے میں دو محافظ شہید ہوگئے تھے۔شہید سپاہی عبداللہ السبیعی کے والد سے گفتگو کرتے ہوئے ولی عہد نے کہا کہ عبداللہ السبیعی نے اللہ کی راہ میں اپنی جان کا نذرانہ پیش کیا ہے۔ اس موقع پر شہید کے والد نے کہا کہ وہ، اس کے بچے اور والدین سب وطن عزیز اور ملک کے فرمانروا پر قربان ہوجائیں تب بھی کم ہے۔ اس پر شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ ’’اللہ آپ کا چہرہ روشن کرے، آپ کا یہی وہ جذبہ ہے جو ہماری عزیمت میں اضافے کا ذریعہ ہے‘‘۔شہزادہ محمد بن سلمان نے شہید سپاہی کے والد سے کہا کہ آپ کے بیٹے کے خون کا بدلہ لینا میرے ذمہ ہے، ہر انتہا پسند اور دہشت گرد کو اس کی سزا مل کر رہے گی، دوسری بات یہ کہ میں خود کو آپ کے خاندان کا فرد سمجھتا ہوں۔خیال رہے کہ جدہ شاہی محل پر حملے میں سارجنٹ حماد بن شلاح المطیری اور عبداللہ بن فیصل السبیعی شہید جب کہ ولید بن علی شامی، احمد صالح القرنی اور عبداللہ ھندی السبیعی زخمی ہوگئے تھے۔