’پاکستان دنیا کا وہ ملک ہے جہاں۔۔۔‘ سعودی شہری نے اخبار میں ایسا مضمون لکھ ڈالا کہ پڑھ کر ہر پاکستانی کا فخر سے سینہ چوڑا ہوجائے گا، ملک کے خلاف باتیں کرنے والوں کی زبانیں بند ہوجائیں گی

عرب دنیا

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان قدرت کا وہ انعام ہے جس پر ہم جتنا بھی فخر اور شکر کریں کم ہے لیکن بدقسمتی سے غیر تو غیر بعض اپنے بھی اس نعمت کی قدر و قیمت سے آگاہ نہیں، یا شاید جان بوجھ کر لاعلم بن جاتے ہیں ۔ ایسے لوگوں کو آئینہ دکھانے کے لئے کسی پاکستانی نے نہیں بلکہ ایک عرب صحافی نے ایسی تحریرلکھ ڈالی ہے کہ جس کا ایک ایک لفظ پڑھنے سے تعلق رکھتا ہے۔ ویب سائٹ سعودی گزٹ پر شائع ہونے والے اس خصوصی مضمون میں صحافی طارق المعینہ کچھ یوں قمطراز ہیں:
تقریباً دو ہفتے قبل جب میں نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے شکست کے جبڑوں سے فتح چھین لینے کے متعلق ایک مضمون لکھا تو مجھے کچھ ایسے تبصرے موصول ہوئے جن پر میں پریشان ہو گیا۔ ان میں سے ایک ناقد ایک مغربی ملک سے جبکہ دوسرا ایشیائی تھا۔ ان کی تنقید کا خلاصہ یہ تھا کہ میں نے ایک ایسے ملک کی تعریف کی ہے جو ان دونوں صاحبان کے خیال میں ایک ناکام ریاست ہے۔ کوئی فیصلہ کرنے سے پہلے آئیے اس ملک پر ایک قریبی نگاہ ڈالتے ہیں۔

’میں پاکستانی مردوں سے ملی تو مجھے احساس ہوا کہ یہ تو دراصل خود۔۔۔‘ پاکستان آئی فرانسیسی خاتون نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر تمام پاکستانی مَردوں کے منہ کھلے کے کھلے رہ جائیں
پاکستان کو ان 11ملکوں میں سے ایک شمار کیا گیا ہے جو اکیسویں صدی کے دوران دنیا کی سب سے بڑی معیشتوں میںشامل ہونے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ گزشتہ پانچ سال کے دوران پاکستان کی شرح خواندگی میں 250فیصد اضافہ ہوا ہے جو کہ آج تک کی تاریخ میں کسی بھی ملک میں شرح خواندگی کا سب سے بڑا اضافہ ہے۔
انسٹی ٹیوٹ آف یورپین بزنس اینڈ ایڈمنسٹریشن نے پاکستانیوں کو دنیا کی چوتھی ذہین ترین قوم قرار دیا ہے۔ او لیول اور اے لیول کے کیمبرج امتحانات میں پاکستانیوں نے دنیا بھر میں ٹاپ کیا ہے، اور یہ ایسا ریکارڈ ہے جو اس سے پہلے کبھی نہیں بنایا گیا۔ دنیا کے کم عمر ترین مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ارفع کریم اور بابر اقبال کا تعلق پاکستان سے ہے۔
سائنسدانوں اور انجینئروں کی ساتویں بڑی تعداد پاکستان میں پائی جاتی ہے۔ دنیا کا چوتھا سب سے بڑا براڈ بینڈ انٹرنیٹ سسٹم بھی پاکستان میں ہے۔ یہ پہلا اسلامی ملک ہے جو ایٹمی طاقت بنا۔ یہ ملک دنیا کے ماہر ترین ائیرفورس پائلٹوں کیلئے بھی پہچانا جاتا ہے۔ اس ملک کی میزائل ٹیکنالوجی بھی دنیا میں صف اول میں شمار ہوتی ہے جبکہ دنیا کی چھٹی بڑی فوجی قوت بھی اس ملک کے پاس ہے۔ چین کے تعاون سے پاکستان نے JF-17 تھنڈر جنگی جہاز بنایا ہے جو کہ ایک لائٹ ویٹ، ایک انجن والا، ملٹی رول جنگی طیارہ ہے، جسے پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس میں بنایاگیا ہے۔
دنیا میں گرم پانی کی سب سے بڑی بندرگاہ پاکستان کے صوبے بلوچستان میں واقع گوادر کی بندرگاہ ہے ۔ پاکستان کا تربیلا ڈیم دنیا میں سب سے بڑا مٹی کا ڈیم اور مجموعی طور پر دنیا کا دوسرا بڑا ڈیم ہے۔ پاکستان اور چین کو ملانے والی شاہراہ قراقرم دنیا کی بلند ترین پختہ بین الاقوامی سڑک ہے۔ کھیوڑہ کی کان دنیا میں نمک کی دوسری بڑی کان ہے۔ دنیا کا سب سے بڑا نہری نظام بھی پاکستان کے پاس ہے جو تقریباً ڈیڑھ کروڑ ہیکٹر رقبے کو سیراب کرتا ہے۔ یہ دنیا کی قدیم ترین تہذیب اور 60 سے زائد زبانوں والا ملک ہے۔

’میں بھارت کے راستے واہگہ بارڈر سے پاکستان میں داخل ہوئی تو امیگریشن اہلکار شک کی نگاہ سے دیکھنے لگے لیکن پھر جب انہیں آمد کا مقصد بتایا تو وہاں موجود ہر پاکستانی مسکرانے لگا اور پھر۔۔۔‘ پاکستان آئی فرانسیسی لڑکی نے اپنے دورے کی ایسی تفصیلات بتادیں کہ جان کر پاکستانی خوش ہوجائیں گے
پاکستان کا فلاحی ادارہ ایدھی فاﺅنڈیشن دنیا کی سب سے بڑی فلاحی ایمبولینس سروس چلاتا ہے۔ دنیا کے کم عمر ترین سول جج محمد الیاس کا تعلق بھی اسی ملک سے ہے۔ سرجری کے آلات اور دنیا بھر میں استعمال ہونے والے فٹبالوں میں سے تقریباً 50 فیصد پاکستان برآمد کرتا ہے۔ دنیا کی دوسری بڑی چوٹی کے ٹو پاکستان میں ہے جبکہ پاکستان میں ہی دنیا کا سب سے بلندی پر واقع پولو گراﺅنڈ ہے جو کہ سطح سمندر سے 3700 میٹر کی بلندی پر ہے۔ 1994ءمیں پاکستان دنیا کا پہلا ملک بن گیا جس کے پاس چار کھیلوں میں ورلڈ چیمپیئن کا اعزاز تھا۔ یہ کھیلیں کرکٹ، ہاکی، سکواش اور سنوکر تھیں۔
شاید مجھ پر تنقید کرنے والے میڈیا کی ان شہ سرخیوں سے زیادہ متاثر ہیں جو ہمیشہ پاکستان کا منفی تاثر دینے کی کوشش کرتی ہیں۔ میں ان ناقدین سے گزارش کروں گا کہ وہ کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے اس ملک پر ایک اور نظر ڈالیں، کیونکہ خوبصورتی دیکھنے والے کی آنکھ میں ہوتی ہے۔