سعودی اسکولوں میں طلباءکو نفرت کی تعلیم دی جاری ہے، ہیومن رائٹس واچ

عرب دنیا

بیروت (ڈیلی پاکستان آن لائن) ہیومن رائٹس واچ نے الزام عائد کیا ہے کہ سعودی عرب کے اسکولوں میں پڑھائے جانے والے نصاب میں طلباءکو ’نفرت‘ کی ترغیب دی جا رہی ہے۔

روہنگیا مسلمانوں کی اپنے گھروں کو خود جلانے کی تصاویر جعلی نکلیں
تفصیلات کے مطابق نیو یارک میں قائم بین الاقوامی ادارے ہیومن رائٹس واچ کی آج جاری کردہ رپورٹ کے مطابق سن 2016 اور 2017ءکے لیے سعودی وزارت تعلیم کی منظور کردہ کتابوں میں نفرت آمیز اور غیر مہذب زبان استعمال کی گئی ہے۔ کتابوں کی تحریر میں مسیحیوں اور یہودیوں کو ’کفار‘ قرار دیتے ہوئے ان سے نہ ملنے کی تلقین کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں سنی مسلمانوں کے علاوہ سوفی اور شیعہ مسلمانوں کے حوالے سے بھی متنازعہ باتیں شامل ہیں۔ ہیومن رائٹس واچ کی مشرق وسطی کے لیے ڈائریکٹر سارا لیا وٹسن کا کہنا ہے کہ پہلی جماعت ہی سے طالب علموں کو دیگر مذاہب کے ماننے والوں کے لیے نفرت پر اکسایا جا رہا ہے۔