دنیا بھرکے تمام حجاج کرام کا بلا امتیاز احترام یقینی بنائیں گے:سعودی عرب

عرب دنیا

ریاض(آن لائن)سعودی عرب نے حج اور عمرہ سے متعلق اپنے اصولی موقف کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حج و عمرہ کی مقدس عبادت کی ادائیگی کے لیے آنے والے تمام مسلمان ملکوں کے باشندوں کا بلا تفریق احترام یقینی بنایا جائے گا۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق گذشتہ روز خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی زیرصدارت کابینہ کا اہم اجلاس ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومت تمام عازمین حج کی قطع نظر ان کی شہریت کے خدمت کا سلسلہ جاری رکھے گی۔

اجلاس کے بعد پریس کو جاری ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ حجاج کرام اور متعمرین عظام کی خدمت سعودی حکومت کا مذہبی فریضہ ہے۔ سعودی حکومت اور پوری قوم حجاج ومعتمرین کی خادم ہے۔ حج اور عمرے کی غرض سے سعودی عرب آنےوالے تمام اقوام کے مسلمانوں کا بلا تفریق خیر مقدم کیا جائے گا۔ حکومت تمام ممالک سے آئے حجاج کرام کی خدمت ، سہولت اور ان کے راحت وآرام اور تحفظ کے لیے مادی اور بشری سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنائے گی۔

اس موقع پر کہا گیا ہے کہ رواں سال حج کے موقع پر ایرانی عازمین حج بھی شرکت کریں گے۔ گذشتہ برس ایران نے معاہدہ طے پانے کے باوجود ایرانی عازمین کو حج کے لیے بھیجنے سے انکار کردیا تھا۔ادھر سعودی عرب کی وزارت حج وعمرہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں بھی کہا گیا ہے کہ رواں سال موسم حج پر ایرانی حجاج کرام کو شریک کرنے کے لیے تمام انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں۔سعودی حکومت نے واضح کیا ہے کہ حج ایک مقدس روحانی عبادت ہے۔ حج جیسے مقدس فریضے کو سیاسی رنگ دینا یا اسے انتشار اور افراتفری پھیلانے کی کوشش کرنا کسی صورت میں قبول نہیں کیا جائے گا۔