حکمرانوں کی نااہلی سے آئین اور جمہوریت خطرے میں سراج الحق

صفحہ آخر

                         کشمور ،کندھ کوٹ ، گدو بیراج(اے این این) امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ کرپشن پر قابو پالیا جائے تو قرضوں کی ضرورت نہیں رہے گی ۔ملک پرقابض اشرافیہ اربوںروپے کی کرپشن کرچکا ہے ،مئی کے الیکشن کے بعد قوم کو توقع تھی کہ مرکز اور صوبائی حکومتیں وعدوں پر عمل کریں گی،لیکن حکومت نے اپنے منشور پر عمل نہیں کیاجس کی وجہ سے عوام کے مسائل حل نہیں ہوسکے ۔حکمرانوں کی نااہلی کی وجہ سے سیاست تنازعات کا شکار ہو گئی اور آئین و جمہوریت خطرے میں آ گئے ہیں ۔سندھ کا دورہ کرکے غریب ہاریوں سے اظہار یکجہتی کرنے اور انہیں ترقی و خوشحالی کا ایجنڈادینے آیا ہوں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اندرون سندھ کے تین روزہ دورے کے موقع پر کشمور ،کندھ کوٹ اور گدو بیراج میں استقبالی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر امیر جماعت اسلامی سندھ معراج الہدیٰ صدیقی بھی موجود تھے ۔ سراج الحق نے کہا کہ ہمارے ملک پر حکمران رہنے والا اشرافیہ گرمیوں کی چھٹیاں فرانس اور لندن میں گزارتا ہے اورغریب عوام کے حقوق کی بات وہ لوگ کرتے ہیں جنہیں غریبوں کے مسائل سے کوئی سروکار نہیں ،انہوں نے کہا کہ ووٹ لینے کے بعد انہیں پانچ سال تک غریب نظر نہیں آتے ،غریب کا کام صرف ووٹ اور ٹیکس دینا رہ گیا ہے ،انہوں نے کہا کہ 67سال تک ملکی اقتدار پر براجمان جاگیرداروں،سرمایہ دار وںاور وڈیروں کے کتے پلاﺅ کھاتے ہیں جبکہ غریب فاقہ کشی پر مجبور ہیں ،انہوں نے کہ روایتی سیاستدانوں کیلئے سیاست بھی تجارت ہے ،عوام ووٹ دیتے ہیں اور اس کے بدلے میں انہیں مہنگائی، غربت،بدامنی اور ذلت ملتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی اس ظالمانہ نظام کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئے میدان عمل میں ہے ،جب تک ہم غریب ہاریوں مزدوروں اور محنت کشوں کو ان وڈیروں اور جاگیرداروں کے برابر کھڑا نہیں کردیتے چین سے نہیں بیٹھیں گے ۔ سراج الحق نے کہا کہ پاکستان کی نجات اور بقا جمہوری جدوجہد میں ہے۔ملکی مسائل کے حل کے لیے مسلح جدوجہد کی ضرورت نہیں،جب گیٹ کھلا ہے تو روشندان پھلانگنے کی کیاضرورت ہے ؟ا نہوں نے کہا کہ مڈٹرم الیکشن سے پہلے الیکشن ریفارمز ضروری ہیں ورنہ الیکشن بے معنی ہوں گے،جن پر قوم اعتماد نہیں کرےگی ،انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی تشکیل نواور الیکشن ریفارمز کے حوالے سے حکومت سنجیدہ اقدامات کرے اور قانون کی حکمرانی کو یقینی بنایا جائے۔حکمران اپنی حکومت بچانے کیلئے عوام کے مسائل حل کر نے پر توجہ دیں،اگر عوامی مسائل حل ہوتے تو آج حکمران بے یقینی کی کیفیت میں مبتلا نہ ہوتے
سراج الحق