سونے کی قیمتوں میں انتہائی تیزی سے اضافہ ہونے والا ہے کیونکہ۔۔۔

بزنس

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) شمالی کوریا اور امریکہ کے درمیان جنگ کے بڑھتے ہوئے خطرے نے جہاں عالمی سیاست میں ہلچل برپا کررکھی ہے وہیں سونے کی مارکیٹ کو بھی درہم برہم کر دیا ہے۔ خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق غیر یقینی سیاسی حالات کی وجہ سے سونے کی قیمت میں اضافہ ہو رہا ہے اور آنے والے دنوں میں یہ اضافہ بہت زیادہ بڑھ سکتا ہے۔ اس وقت بھی سونے کی قیمت گزشتہ دو ماہ کی بلند ترین سطح پر ہے ۔
گزشتہ روز سپاٹ گولڈ کی قیمت 0.1فیصد اضافے کے بعد 1287.83 ڈالر فی اونس ہوگئی۔ یہ 8جون کے بعد سے اب تک کی بلند ترین سطح ہے۔ کوانٹی ٹیٹو کموڈٹی ریسرچ کنسلٹنٹ پیٹر فرٹیک کا کہنا تھا کہ جمعرات کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے شمالی کوریا کے ساتھ جنگ کے متعلق دئیے جانے والے بیان کے بعد سے سونے کی قیمت میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ چونکہ آنے والے دنوں میں کشیدگی کم ہوتی نظر نہیں آتی لہٰذا یہ توقع کی جاسکتی ہے کہ قیمت میں مزید تیزی سے اضافہ ہوگا۔
اقتصادی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ غیر یقینی حالات میں کاروباری طبقہ محفوظ سرمایہ کاری کی جانب مائل ہوتا ہے۔ چونکہ سونے میں سرمایہ کاری کو نسبتاً محفوظ سمجھا جاتا ہے لہٰذا جونہی غیر یقینی حالات پیدا ہوتے ہیں تو سونے کی خریداری بڑے پیمانے پر شروع ہوجاتی ہے، جو عالمی مارکیٹ میں اس کی قیمت میں اضافے کا سبب بنتی ہے۔