5خواتین سے زیادتی، کرایہ کا مکان دیکھنے جانیوالی اجتماعی درندگی کا شکار ہو گئی

جرم و انصاف

لاہور (ویب ڈیسک) اوباشوں نے مختلف شہروں میں شادی شدہ سمیت 5 خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنا دیا۔ فیض پور کلاں کی رہائشی خاتون (ع) کو مکان دکھانے کے بہانے محمود رفیق نے بلایا بعد میں ملزمان نے اسے ایک مکان میں لے جا کر اس کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی اور فرار ہو گئے۔ فیکٹری ایریا پولیس نے خاتون کی درخواست پر ملزمان رفیق، نسیم اور ساتھیوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔ شاہ کوٹ میں اسلام نگرکی رہائشی فرحت گھر سے ڈیرہ کی طرف جا رہی تھی کہ راستے میں گاﺅںکے مدثر نے اپنے ساتھی کی مدد سے اسے زبردستی ایک ڈیرہ پر لیجا کر اسے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ فیصل آباد کے باہلک کے علاقہ چک 602گ ب کے رہائشی اعظم کی اہلیہ عذرا بی بی گھر میں اکیلی تھی دیوار پھلانگ کر گھرگھسنے والے ملزموں عدنان اور اس کے ساتھی نے اسلحہ کے زور پر اسے زیادتی کا نشانہ بنا کر فرار ہو گئے۔ پاکپتن میں گاﺅں نیب وال کے غلام فرید کے گھر سیف علی نے تین افراد کے ہمراہ گھس کر اس کی دختر (س) کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ پولیس نے مقدمات درج کر لئے ہیں۔گجرات کے علاقہ رندھیر کھوکھراں میں دو ماہ قبل بنیادی مرکز صحت چکوڑی بھیلوال میں رات گئے چار نرسوں کو ڈکیتی کی واردات کے دوران اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے واقعہ میں ملوث مرکزی ملزم شہزادعرف شہزادہ نواحی گاﺅں رندھیر کھوکھراں کے قریب کار چھین کر فرار ہو رہا تھا کہ پولیس نے پیچھا کر کے انہیں گھیرے میں لیا تو ڈاکوﺅں نے فائرنگ شروع کر دی اسی دوران ایک ڈاکو گولیاں لگنے سے ہلاک ہو گیا جسکی شناخت رات گئے قمر شہزاد عرف شہزادہ کے نام سے ہوئی ہے ملزم چکوڑی بھیلوال مقدمہ کا مرکزی ملزم تھا اور ڈیڑھ ماہ قبل کنجاہ میں ہونیوالے پولیس مقابلے کے دوران بھاگ جانے میں ساتھی سمیت کامیاب ہو گیا تھا جبکہ ا سکے چار ساتھی مقابلے میں ہلاک ہو گئے تھے۔