درندہ صفت باپ کی 4 ماہ تک حقیقی بیٹی سے زیادتی ، اعتراف جرم کرلیا

جرم و انصاف

بورے والا(ویب ڈیسک) درندہ صفت  باپ مبینہ طورپر چار ماہ تک 11 سالہ حقیقی بیٹی سے شیطانی کھیل کھیلتا رہا، دوسری کلاس کی طالبہ معصوم بیٹی باپ کے خوف سے خاموش رہی لیکن لڑکی کی ماں کی شکایت پر پولیس نے باپ  کو گرفتار کر کے مقدمہ درج کر لیا جبکہ دعویٰ کیاگیا ہے کہ ملزم نے پولیس کے سامنے اقرار جرم بھی کرلی لیکن بچی کو میڈیکل کیلئے ہسپتال منتقل  کردیاگیا۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روزنامہ خبریں کے مطابق میاں چنوں موڑ ظفر کالونی کی رہائشی خاتون عائشہ نے دعویٰ کیا ہے کہ  اس کا خاوند محمد اشرف جو کہ آتش بازی کا سامان فروخت کرتا ہے عرصہ چار ماہ سے اس کی 11 سالہ حقیقی بیٹی دوسری کلاس کی طالبہ سے زیادتی کرتا آرہا تھا اور اس نے بچی کو دھمکی دی تھی کہ اگر تم نے اپنی ماں یا کسی اور کو بتایا تو تمہیں جان سے مار دوں گا اس خوف سے اس نے زبان نہ کھولی ،شک پڑنے پر اس نے اپنی بیٹی سے پوچھا تو اس نے مجھے اس کے اس شرمناک فعل کے متعلق بتا دیا جس پر میں نے اپنے خاوند کو چند روز قبل سمجھایا تو اس نے معافی مانگ لی لیکن وہ باز نہ آیا اور آج صبح جب میں اپنے چھوٹے بیٹے کو دوائی دلوانے گئی تو واپسی پر دیکھا کہ اُس کا خاوند اس کی 11 سالہ معصوم بیٹی (ر) کو پھر اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بنا رہا تھا ہمیں دیکھتے ہی وہ اسے برہنہ حالت میں چھوڑ کر فرار ہو گیا۔ یہ سب دیکھ کر میں نے فیصلہ کیا کہ اب اس درندہ صفت انسان کو معاف نہیں کرنا اور ڈی پی او وہاڑی سے اپنے خاوند کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔

ڈی پی او اور وہاڑی عمر سعید ملک نے اطلاع ملتے ہی ملزم کی فوری گرفتاری اور اس کے خلاف مقدمہ درج کر کے اسے مکمل تحفظ فراہم کرنے کا حکم دیا ،تھانہ صدر پولیس نے دو گھنٹے میں پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ علاقے کا محاصرہ کر کے اسے گرفتار کر لیا اور اس کی بیوی کی درخواست پر اس کے خلاف مقدمہ بھی درج کر لیا ۔رپورٹ کے مطابق دریں اثناءملزم نے تھانہ صدر پولیس اور میڈیا کی موجودگی میں اقرار جرم کر لیا ۔