دبئی میں پیسوں کے عوض 300مردوں کیساتھ جنسی بدفعلی کرنے والا مراکشی باشندہ گرفتار

جرم و انصاف

دبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) دبئی میں 3سو مردوں سے جنسی تعلق قائم کرنے والے ملزم کو گرفتار کر لیا گیا جس کے قبضے سے ایک لپسٹک ، آئی لائنراور ایک موبائل فون برآمد ہواہے۔ملزم پیسوں کی خاطر یہ مکرو کام کرتا تھا ۔ 

خلیج ٹائمز کے مطابق دبئی میں مقیم 29سالہ مراکشی باشندے نے عدالت میںہم جنس پرستی کا انکشاف کر تے ہوئے کہا ہے کہ وہ اپنے مختلف سوشل میڈیا اکائنٹس پر خواتین اور خواجہ سراﺅں کی فحش تصاویر پوسٹ کر کے لوگوں کو پیسوں کے عوض اپنے ساتھ جنسی بدفعلی کیلئے اکساتاتھا ۔

شہید ایس ایس پی سی آئی ڈی چوہدری اسلم کے گھر پر حملے میںکون ملوث تھا ؟ جانکر آپ بھی حیران پریشان ہو جائیں گے

پولیس کی تفتیش کے دوران ملزم نے 3سو مردوں کیسا تھ جنسی بدفعلی کرنے کا اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اپنے ساتھ بدفعلی کرنے والوں سے1ہزار سے 1500درہم تک وصول کرتا تھا جبکہ اس نے اپنے سوشل میڈیا اکاﺅنٹس پر گھروں اور ہوٹلز میں جا کر مساج ، ہیئر ریموول اور کلیننگ کی سہولت فراہم کرنے کے حوالے سے اشتہار بھی لگا رکھا تھا اور واٹس ایپ میسیجنگ کیلئے موبائل نمبر بھی مہیا کیا ہوا تھا ۔

کویت نے پاکستان پر لگائی گئی ویزا پابندی ختم کردی

ملزم نے بدفعلی کے کاروبار کی تشہیر کیلئے اپنے اکاﺅنٹ پر جگہ جگہ خواتین اور خواجہ سراﺅں کی فحش تصاویر لگا رکھی تھیں جبکہ اس کے اشتہارات پر بہت سے لوگوں نے دلچسپی کا اظہار بھی کر رکھا تھا ۔اس کے علاوہ اس اوباش نوجوان نے فیس بک ، انسٹا گرام اور سنیپ چیٹ پر بھی اسی مقصد کیلئے دیگر اکاﺅنٹس بھی بنا رکھے تھے ۔
پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ملزم پیسوں کے عوض اپنے آپ کو جنسی بدفعلی کیلئے پیش کر تا تھا اور حقائق سامنے آنے کے بعد ایک اہلکار نے صارف بن کر ملزم سے رابطہ کیا تو اس نے 1200درہم میں اس کے ساتھ بدفعلی کی حامی بھر لی جس پر اسے 13دسمبر کو گرفتار کر کے عدالت پیش کیا گیا جس کا فیصلہ 21مئی کے روز سنایا جائے گا ۔