”میں ریپ کا مقدمہ درج کروانے گئی مگر پولیس والے نے ایک نہ سنی، پھر ایک دن وہی پولیس والا۔۔۔“ پاکستانی شادی شدہ خاتون کیساتھ انتہائی شرمناک واقعہ پیش آگیا، انسانیت خون کے آنسو رونے لگی

جرم و انصاف

بہاولپور (ڈیلی پاکستان آن لائن) ریپ کا مقدمہ درج کرانے صدر پولیس سٹیشن جانے والی شادی شدہ خاتون کی ایک نہ سنی گئی لیکن پھر پولیس اہلکار خود بھی درندہ بن گیا اور خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔پولیس افسر کو زیادتی کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

معروف برانڈز کے گرمیوں کے ملبوسات کیلئے شاندار سہولت متعارف، خواتین کیلئے خوشخبری آگئی
عباسیہ ٹاﺅن کی رہائشی خاتون اپنے دور کے رشتہ دار کے خلاف ریپ کا مقدمہ درج کرانے کیلئے صدر پولیس سٹیشن آئی ۔ اس نے الزام عائد کیا کہ ملزم اس کے شوہر کی غیر موجودگی میں اس کے گھر آیا اور زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ جب وہ اپنے شوہر کے ساتھ پولیس سٹیشن شکایت درج کرانے گئی، تو تفتیشی افسر اشفاق ترین نے اس کی ایک نہ سنی اور بعد ازاں اسے بار با ر فون کرنے لگا۔
خاتون نے بتایا کہ ایک دن پولیس اہلکار اشفاق اس کے شوہر کی غیر موجودگی میں اس کے گھر آیا، اس کے بچوں کو دوسرے کمرے میں بند کیا اور اسے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ خاتون کی شکایت پر سب انسپکٹر اشفاق کے خلاف زیادتی کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور صدر پولیس سٹیشن میں ہی اشفاق کو بند بھی کر دیا گیا ہے۔ ڈی پی او بہاولپور اشفاق احمد خان نے ملزم سب انسپکٹر کو معطل کرتے ہوئے اس کے خلاف تحقیقات کا حکم دیدیا ہے۔

شادی کے سیزن میں اس چیز سے بال دھونے سے ان میں ایسی چمک آئے گی کہ سب آپ کی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے
دوسری جانب اشفاق نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کچھ روز پہلے مذکورہ خاتون ریپ کا جعلی مقدمہ درج کرانے کیلئے پولیس سٹیشن آئی تھی ۔ جب مقدمہ درج نہ ہوا، تو مضطرب خاتون نے اس کے خلاف شکایت کر دی۔