سرکاری سکول کے مالی نے گھر کے باہر دکان کی مالکن کو بیٹیوں سمیت ذبح کردیا، ان کا قصور کیا تھا ؟ انتہائی دلخراش خبرآگئی

جرم و انصاف

قصور (ویب ڈیسک) سرکاری سکول میں مالی  نے نواحی علاقے میں گھریلو ناچاقی پر بیوی اور 3 بیٹیوں کو ٹوکے سے ذبح کردیا۔

مقامی میڈیاکے مطابق دل دہلا دینے والا المناک واقعہ تھانہ بی ڈویژن کی بستی صابری میں پیش آیا جہاں حنیف نامی شخص نے ٹوکے کے وار کرکے بیوی اور 3 بیٹیوں کو قتل کر دیا، مقتولین میں 40 سالہ شاہدہ، 16 سالہ طیبہ، 14 سالہ لائبہ اور 8 سالہ ثمرہ شامل ہیں، چاروں خواتین کو گھریلو ناچاقی کی بنا پر قتل کیا گیا۔ محلے والوں کے مطابق حنیف اور اس کے گھر والے شریف لوگ ہیں اور قتل ہونے والی شاہدہ گھر کے باہر پرچون کی دکان چلاتی تھی۔

پولیس کے مطابق واقعے کے وقت ملزم حنیف کے 3 بیٹے بھی گھر میں موجود تھے جنہیں اس نے چھوڑ دیا اور اپنی بیوی سمیت 3 بیٹیوں کو موت کی نیند سلا دیا۔ ملزم حنیف سرکاری سکول میں مالی ہے تاہم واقعے کے بعد اس نے خود کو پولیس کے حوالے کر دیا جس کے بعد پولیس نے مزید تفتیش شروع کردی ہے۔