شادی سے انکار پر تاجر قتل، نازک اعضا کاٹ کر نالی میں پھینک دئیے

جرم و انصاف

شیخوپورہ (ویب ڈیسک) مصروف ترین سول کوارٹر روڈ جناح پارک میں لاہور کے تاجر فرخ ناصر کو شادی سے انکار پر اسکی دکان میں گھس کر بے دردی سے قتل کرنے کے بعد اس کے نازک اعضاء کاٹ کر نالی میں پھینک دئیے اور قاتل فرار ہوگئے۔

بتایا گیا 32 سالہ لاہور کا رہائشی تاجر کی سول کوارٹر روڈ پر الیکٹرونک اشیاء اقساط پر دینے کی دکان تھی کہ اس کی ایک لڑکی عاصمہ سے آشنائی ہوگئی۔ عاصمہ سے شادی کرنے کے سبز باغ دکھائے گئے، گزشتہ روز عاصمہ بی بی کی بہن، بہنوئی شہزاد تاجر فرخ ناصر کے پاس آئے کہ اب شادی کیلئے اپنے والدین کو عاصمہ کے گھر بھجوایا جائے تاکہ یہ رشتہ پکا ہو سکے مگر تاجر فرخ نے انکار کر دیا جس پر شہزاد نے ساتھیوں کے ہمراہ فرخ ناصر کی دکان میں داخل ہوکر اس کو قتل کرنے کے بعد اس کے نازک اعضاء بھی کاٹ دئیے۔

غیرت کے نام پر باپ نے بیٹی کو قتل کر دیا ‘مقتولہ نے گھر والوں کی مرضی کے خلاف شادی کی تھی

وہاں پر خط چھوڑ دیا جس پر لکھا تھا کہ ’’کسی کی عزت سے کھیلنے کا انجام یہی ہوتا ہے‘‘ تھانہ اے ڈویژن پولیس نے مقتول کے والد دھرم پور کے رہائشی عبدالمجیدکی مدعیت میں مقدمہ درج کرلیا تاہم فرخ کے قتل کے بارے میں اصل حقائق تفتیش کے بعد منظر عام پر آئیں گے۔