حجرہ شاہ مقیم: باپ نے جواں سال بیٹی چند کوڑیوں میں بیچ دی، 7روز تک زیادتی

جرم و انصاف

حجرہ شاہ مقیم (ویب ڈیسک) باپ نے جواں سالہ بیٹی چند کوڑیوں کے عوض بیچ ڈالی، ماں بیٹی کو سات روز لاہور میں نامعلوم مقام پر بند رکھ کر زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا رہا، موقع پاکر بھاگ نکلنے میں کامیاب، باپ سمیت پانچ افراد کے خلاف مقدمہ درج، ملزمان جلد گرفتار کرلئے جائیں گے، ایس ایچ او حجرہ شاہ مقیم کی میڈیا سے گفتگو۔

تفصیلات کے مطابق حجرہ شاہ مقیم کی خاتون ارشاد بی بی کی تین بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے، دو بیٹیاں شادی شدہ ہیں، اس کا خاوند غلام رسول جو کہ ایک پلاٹ تھانہ راوی کا رہائشی بتایا گیا ہے وہ اچھے کردار کا حمل نہیں ہے جس نے محمد حسن تھہیم سے مالی فوائد اٹھاکر اپنی چھوٹی بیٹی ارم بی بی کی شادی کرنا چاہی جس نے انکار کردیا تو سفاک باپ اپنے ہمراہ محمد حسن، محمد یوسف، رانی بی بی زوجہ محمد یوسف، ناصرہ بی بی زوجہ محمد حنیف کے آیا اور اپنی بیوی ارشاد بی بی، جواں سال بیٹی ارم بی بی کو گن پوائنٹ پر حجرہ شاہ مقیم سے اغواءکرکے لے گئے اور انہیں ملزمان کے حوالہ کردیا گیا، ملزمان نے انہیں سات روز لاہور میں نامعلوم مقام پر محبوس بنائے رکھا اسی دوران ملزمان خاتون ارشاد پر انسانیت سوز تشدد کرتے رہے جبکہ لڑکی کے ساتھ ملزم محمد حسن منہ کالا کرتا رہا اور کاغذات پراس کے انگوٹھے لگوائے۔ بعدازاں وہ موقع پاکر وہاں سے بھاگ نکلنے میں کامیاب ہوگئیں اور حجرہ شاہ مقیم پہنچ کر اپنے اوپر ہونے والے مظالم کی داستان مقامی کونسلر سید رفاقت علی گیلانی کے ذریعے حجرہ پریس کلب میں صحافیوں کو سنائی جس پر واقعہ سے ایس ایچ او حجرہ شاہ مقیم آفتاب صابر کو آگاہ کیا گیا جنہوں نے فوری ایکشن لیتے ہوئے مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاشی شروع کردی۔