ہمسائے نے 6 سالہ بچی کے کپڑوں پر خون دیکھ کر پولیس کو بلالیا، پولیس نے تفتیش کی تو اس حالت کی انتہائی شرمناک ترین وجہ کیا نکلی؟ جواب ایسا کہ دنیا کا کوئی انسان تصور بھی نہیں کرسکتا، اپنے ہی باپ نے۔۔۔

جرم و انصاف

نئی دلی (نیوز ڈیسک) بھارت سے جنسی درندگی کی خبر آنا کوئی نئی بات نہیں رہی کیونکہ اس ملک میں تو گویا جنسی جرائم کا طوفان آ چکا ہے، مگر بھارتی دارالحکومت میں ایک سوتیلے باپ نے درندگی کی ایسی انتہا کر دی کہ جس کا ذکر سن کر انسانیت خوف سے کانپ اٹھے۔
ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق شہر کے جنوبی حصے میں ایک شقی القلب سوتیلے باپ نے اپنی چھ سالہ بچی کو اپنی حیوانیت کا نشانہ بنا ڈالا، جس کے نتیجے میں بچی لہو لہان ہو گئی اور اب ہسپتال میں انتہائی نگہداشت میں ہے۔ لرزہ خیز واقعے کا انکشاف اس وقت ہوا جب ایک ہمسائی نے کمسن بچی کے لباس کو خون آلود دیکھا۔ اس نے بچی کی حالت دیکھ کر پولیس کو فون کیا، جس کے بعد پولیس نے متعدد افراد کو گرفتار کیا جن میں بچی کا سوتیلا باپ بھی شامل تھا۔ تفتیش کے دوران اس بدبخت نے اپنے بھیانک جرم کا اعتراف کرلیا۔

’مجھے اپنی بیٹی کوڑے کی ٹوکری میں پڑی ہوئی ملی جسے کتوں نے۔۔۔‘ گینگ ریپ کا نشانہ بننے والی نوجوان لڑکی کے بارے میں ایسی تفصیلات بیان کردیں کہ سن کر انسان تو کیا شیطان بھی کانپ اُٹھے
بچی کے حقیقی باپ کا انتقال دو سال قبل ہوچکا ہے۔ اس کی ماں نے دوسری شادی اپنے دیور سے ہی کی تھی، اور یوں ننھی بچی پر ظلم کرنے والا اس کا سگا چچا بھی ہے۔ متاثرہ بچی کی ہمسائی نے بتایا کہ جب اس نے ننھی لڑکی کو دیکھا تو اس کے کپڑے خون آلود تھے، جس پر فوری طور پر پولیس کو اطلاع کی۔
حکومتی ادارے ڈی سی ڈبلیو کی چیئرپرسن سواتی مالیوال نے ہسپتال میں بچی سے ملاقات کی۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا ”ہمیں لڑکیوں کے بارے میں خاص طور پر احتیاط کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ وہ اب اپنے گھروں میں بھی محفوظ نہیں رہی ہیں۔“