انتہائی کم پرفیوم استعمال کرکے بھی دیر تک خوشبو برقرار رکھنی ہے تو جسم کے اس حصے پر ضرور چھڑکیں، سائنسدانوں نے بچت کا آسان ترین طریقہ بتادیا

ڈیلی بائیٹس

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) عموماً لوگ اپنی کلائیوں پر پرفیوم لگاتے ہیں تاکہ اس کی خوشبو زیادہ دیر تک برقرار رہے لیکن ایک ماہر نے اسے پرفیوم کو ضائع کرنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے جسم کی کچھ ایسی حیران کن جگہیں بتا دی ہیں جہاں لگانے سے پرفیوم تمام دن خوشبو دیتا رہتا ہے۔میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق خوشبویات کی برطانوی ماہر روتھ مسٹن بروک کا کہنا ہے کہ ”پرفیوم لگانے کے لیے ناف، پنڈلیوں کا نچلا حصہ، رانیں، کانوں کا اوپری حصہ، بال، کہنیوں کا اندرونی حصہ، گردن کا پچھلا حصہ اور پاﺅں بہترین جگہیں ہیں۔“

اگر آپ جلد پر ویزلین لگاتے ہیں اس کا یہ سب سے خوفناک نقصان ضرور جان لیں، پوری زندگی پچھتانا پڑسکتا ہے کیونکہ اس کے بعد پھر کبھی۔۔۔
روتھ کا کہنا ہے کہ ”ناف سے چونکہ نبض کا آغاز ہوتا ہے اس لیے یہ جسم کا گرم ترین حصہ ہے، چنانچہ حدت کی وجہ سے پرفیوم کی خوشبوزیادہ دیر تک برقرار رہتی ہے۔ پاﺅں، پنڈلیاں اور رانیںمسلسل حرکت میں رہنے والے حصے ہیں ، جس کی وجہ سے یہاں لگانے سے بھی پرفیوم زیادہ دیر تک چلتا ہے۔ خاص طور پر جب آپ رات کے وقت شارٹس پہن کر باہر جانا چاہتے ہوں، اس وقت پرفیوم لگانے کے لیے یہ بہترین جگہیں ہیں۔ فائبرز پر بھی چونکہ خوشبو زیادہ دیر تک برقرار رہتی ہے اس لیے سر کے بال بھی پرفیوم لگانے کے لیے بہترین جگہ ہیں۔“