دنیا کا پہلا چلتا پھرتا اشتہار، اس آدمی نے اپنے جسم پر 380 معروف ترین کمپنیوں کے لوگو کیوں لگارکھے ہیں؟ جواب ایسا کہ کوئی تصور بھی نہیں کرسکتا، پیسوں کیلئے نہیں بلکہ۔۔۔

ڈیلی بائیٹس

ممبئی (نیوز ڈیسک)آج کل جسم پر ٹیٹو بنوانے کا رواج خاصا مقبول ہو گیا ہے۔ اگرچہ اکثر لوگ جمالیاتی نقطہ نظر سے ایک آدھ ٹیٹو بنوا لیتے ہیں لیکن ایک بھارتی نوجوان نے اس شوق کو نئی انتہاءکو پہنچا دیا ہے، یہاں تک کہ عنقریب ایک ورلڈ ریکارڈ کا مالک بننے والا ہے۔
دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق ممبئی شہر سے تعلق رکھنے والے جیسن جارج کے جسم پر مختلف کمپنیوں کے 380 لوگو نقش ہیں، جن میں گوگل اور پوما جیسی کمپنیاں بھی شامل ہیں۔ 25 سالہ نوجوان کا کہنا ہے کہ اس نے اپنے جسم پر یہ نقش ونگار بنوانے کا فیصلہ اس لئے کیا کہ ان کمپنیوں نے اس کی زندگی پر گہر ااثر ڈالا ہے، جس کے اظہار تشکر کے لئے ان کے لوگو اپنے جسم پر کندہ کروا لئے۔ اسے امید ہے کہ جلد ہی وہ انسانی جسم پر سب سے زیادہ کمپنیوں کے لوگو نقش کروانے کا عالمی ریکارڈ قائم کردے گا۔

سائنسدانوں کو 2200 سال پرانے شاہی جوڑے کی لاشیں مل گئیں، اور پھر اُن کے جسم پر ایک ایسی چیز نظر آگئی کہ حیرت کے مارے ماہرین بھی چکرا کر رہ گئے، وہ چیز جو آج کل کے نوجوانوں کو بھی بے حد پسند ہے
وہ اپنے جسم پر موجود 380 کمپنیوں کے لوگو میں سے صرف 321 کو رجسٹرڈ کروائے گا اور اس کی وجہ اس کی توہم پرستی ہے۔ نوجوان کا کہنا ہے کہ 300ایک بڑا نمبر ہے اور 21 اس کا لکی نمبر ہے لہٰذا وہ کل 321 لوگو ریکارڈ کے لئے رجسٹرڈ کروائے گا۔ وہ اس سے پہلے صرف ایک ماہ میں اپنے جسم پر 177 ٹیٹو بنواکر بھی ایک ریکارڈ بنا چکا ہے۔ جیسن نے اس بات پر بھی خوشی کا اظہار کیا کہ وہ اس شوق کے باعث مقبولیت حاصل کرچکا ہے اور دیگر نوجوان بھی اس کی دیکھا دیکھی اس شوق کو اختیار کرہے ہیں۔