’میں ایک شخص کو جانتا ہوں جو خواتین اینکرز کو اس وقت تک چھٹی نہیں دیتا جب تک وہ اس کے ساتھ ۔۔۔‘ سینئر اینکر پرسن منصور علی خان نے میڈیا کا بھیانک چہرہ بے نقاب کردیا

ڈیلی بائیٹس

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر اینکر پرسن منصور علی خان نے میڈیا میں ہونے والی جنسی ہراسگی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک ایسے شخص کو بھی جانتے ہیں جو خواتین اینکرز کو اس وقت تک چھٹی نہیں دیتا جب تک وہ اس کے ساتھ 10 سے 15 منٹ تک بیٹھ نہیں جاتیں۔
ٹوئٹر پر ایک خاتون صحافی مہوش اعجاز نے خواتین کے خلاف ہونے والی جنسی ہراسگی کے حوالے سے ٹویٹ کیا ’ مجھے حیرانی ہے کہ اگر ہمارے شعبے سے وابستہ خواتین نے بولنا شروع کردیا تو بہت سے لوگ کہیں منہ دکھانے کے قابل نہیں رہیں گے‘۔


مہوش اعجاز کے ٹویٹ کے جواب میں منصور علی خان نے ایک مخصوص شخص کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ’ ایک بڑے چینل میں ایک شخص کام کر رہا ہے جو خواتین اینکرز کی چھٹی اس وقت تک منظور نہیں کرتا جب تک وہ اس کے ساتھ 10 سے 15 منٹ بیٹھ نہیں جاتیں‘۔


منصور علی خان نے اس ’ جنسی بھیڑیے‘ کا نام بتانے سے انکار کردیا اور کہا کہ وہ اس وقت تک اس شخص کا نام نہیں لیں گے جب تک کہ کوئی متاثرہ خاتون اس بات کی اجازت نہیں دے دیتی۔


منصور علی خان نے مزید کہا کہ انہوں نے اس شخص کی چینل انتظامیہ سے شکایت بھی کی لیکن وہ آج بھی اسی چینل میں اپنے عہدے پر کام کر رہا ہے۔