منیبہ مزاری رنگے ہاتھوں پکڑی گئیں،ماضی کی ایک ایسی ویڈیو سامنے آ گئی کہ پاکستانیوں کے دل ٹوٹ گئے

ڈیلی بائیٹس

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )معروف سماجی کارکن ، آرٹسٹ اور موٹیویشنل سپیکر منیبہ مزاری کے سابق شوہر نے اپنے خلاف عائد کردہ الزامات پرمنیبہ کے خلاف مقدمہ درج کر وا دیاہے تاہم منیبہ مزاری کی ایک پرانی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں وہ اپنے شوہر کے بے پناہ تعریفیں کر رہی ہیں ۔
تفصیلات کے مطابق منیبہ مزاری کی سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے کلپ میں وہ پی ٹی وی کو انٹرویو دے رہی ہیں جس میں میزبان کی جانب سے منیبہ سے ان کے شوہر کے ساتھ تعلقات کے بارے میں سوال کیا گیا تو انہوں نے جواب میں اپنے شوہر کے بے پناہ تعریفیں کرتے ہوئے کہا کہ ’ایکسیڈنٹ کا سفر بھی ان کے ساتھ ہی گزر رہا تھا،میں اکثر اوقات جذباتی ہو جاتی ہوں ،وہ بالکل ٹھیک ہیں ،میں اس کی وجہ سے ہی زندہ ہوں ، وہ بہت اچھے انسان ہیں ،وہ میرے شوہر کے علاوہ بہت اچھے دوست ہیں ،جب میں روتی ہیں تو وہ بھی میرے ساتھ روتے ہیں ،وہ مجھے کہتے ہیں تمہیں جو کرناہے تم کرو ،میں تمہارے ساتھ ہوں ۔

منیبہ مزاری نے ایک تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ میں 18سال کی تھی جب میری شادی ہو گئی ،میری شادی کوئی خوشحال نہیں تھی ،شادی کے دو سال کے بعدیعنی 9سال قبل ایک ایکسڈنٹ ہو ا جس میں میرا شوہر گاڑی چلاتے ہوئے سو گیا اور ایکسیڈنٹ ہو گیا ،اس نے کسی طرح خود گاڑی سے چھلانگ لگا دی اور خود کو محفوظ کر لیا ،جبکہ میں گاڑی میں ہی موجود رہی اور مجھے بری طرح چوٹیں لگیں ۔ جب میں ہسپتال میں تھی تو ڈاکٹر آیا اور اس نے کہا کہ تم کبھی ماں نہیں بن پاﺅ گی اور دوسرے دن ڈاکٹر دوبارہ آیا اور کہا کہ تم کبھی چل نہیں پاﺅ گی ۔منیبہ مزاری نے ایکسیڈنٹ کے دوسال کے بعد اپنے شوہر کے ساتھ اتفاق رائے سے ایک بچے کو گود لیا ، اس حوالے سے منیبہ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایک دن مجھے پاکستان کے ایک چھوٹے سے علاقے سے فون آیااور کہا گیا کہ ایک بچہ ہے چھوٹا سا ،کیا آپ اسے گود لیں گے تو میں نے اسے فوری گود لیا،اس وقت وہ صرف دو دن کا تھا لیکن آج وہ 6سال کاہے ۔
واضح رہے کہ منیبہ مزاری کے سابق شوہرشہزاد پاکستان ائرفورس فائٹرپائلٹ رہ چکے ہیں۔ شہزاد نے منیبہ مزاری کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے ضلعی ایڈشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کے جج محمد عدنان سے رجوع کیا ہے۔منیبہ مزاری کے سابق شوہرنے منیبہ مزاری کی جانب سے انٹرنیٹ پروائرل بیانات کے خلاف شکایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرا تعلق ایک عزت دار گھرانے سے ہے، منیبہ مزاری سے میری شادی 26 دسمبر 2005 کو ہوئی تھی جبکہ 27فروری 2008 کو میں نے پی اے ایف کوئٹہ جوائن کیا۔ شہزاد کے مطابق کوئٹہ سے آبائی علاقہ میں جاتے ہوئے اپنی گاڑی خود چلا رہاتھا کہ جیکب آباد پہنچنے پراچانک گاڑی کے سامنے ایک گدھا گاڑی آ جانے سے حادثہ پیش آگیا جس کے نتیجے میں منیبہ کو سنجیدہ نوعیت کی چوٹیں آئیں۔حادثے کے بعد ہم دونوں بچہ نہ ہونے کی وجہ سے پریشان تھے۔ ڈاکٹرز کے مطابق منیبہ بچے کو جنم دے سکتی تھی لیکن پھر ہم نے باہمی رضامندی سے اپنا تعلق مضبوط بنانے کے لیے 12 اپریل 2011 کوہم نے ایک بچہ گود لے لیا جس کی 4 سال تک اپنے بچے کی طرح دیکھ بھال کی۔ اس دوران منیبہ نے کچھ ایسی سرگرمیاں شروع کر دیں جن سے میں نے منع کیا تھا۔ منیبہ نے ماڈلنگ میں بھی دلچسپی لیناشروع کردی تھی جو ہماری خاندانی روایات اور مذہبی ومعاشرتی اخلاقیات کے بھی منافی تھا۔
منیبہ مزاری کے سابق شوہرکے مطابق بطور پاک فضائیہ کا افسر میں اپنی اہلیہ کو ایسی سرگرمیوں کی اجازت نہیں دے سکتا تھا۔ منیبہ نے میرے روکنے پر بجائے منع ہونے کے اپنی مرضی سے بچے کے ہمراہ ستمبر 2014 کو میرا گھر چھوڑ دیا۔ 6 مارچ 2015 کو منیبہ کی جانب سے عدالت میں خلع کی درخواست دائر کی گئی، حالانکہ میں علیحدگی نہیں چاہتا تھا لیکن منیبہ نے اسلام آباد میں حمیرا افضل کی عدالت سے خلع حاصل کی جس کا آرڈر 12 جون 2015 کو جاری ہوا۔اب منیبہ مزاری معروف آرٹسٹ ہیں اور مختلف میڈیا چینلز پر وہ مجھ سے متعلق غلط باتیں کر کے مجھے بدنام کر رہی ہیں۔

ویڈیو دیکھیں: