’خواتین کی یہ چیز قدرتی طور پر مردوں سے بہتر ہوتی ہے‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں کا ایسا انکشاف کہ مردوں کی آنکھوں سے آنسو نکل آئیں گے

ڈیلی بائیٹس

اونٹاریو(نیوز ڈیسک) دنیا بھر کے مرد خود کو خواتین کی نسبت کہیں زیادہ طاقتور سمجھتے ہیں لیکن ان مردوں کو یونیورسٹی آف واٹرلو کی اس تازہ ترین تحقیق کا مطالعہ ضرور کرنا چاہیئے جس کے مطابق طاقت کا یہ زعم محض خام خیالی پر مبنی ہے۔
ٹائمز آف انڈیا کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ قدرتی طور پر خواتین مردوں کی نسبت زیادہ صحتمند و توانا ہوتی ہیں کیونکہ وہ آکسیجن کو مردوں کی نسبت کہیں زیادہ تیزی کے ساتھ پراسیس کرسکتی ہیں، جو کہ صحت و توانائی کا اصل معیار ہے۔ آکسیجن کا زیادہ تیزی سے استعمال کرنے سے جسم کے خلیات پر دباﺅ اور ان کی توڑ پھوڑ کا عمل دھیما پڑجاتا ہے اور اسے دل کی اچھی صحت کی علامت بھی قرار دیا جاتا ہے۔

’جن خواتین کی شادی نہیں ہوئی ہوتی وہ۔۔۔‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پاکستانی مردوں کی آنکھوں سے آنسو نکل آئیں گے
اس تحقیق کے دوران کئے گئے تجربات سے معلوم ہوا کہ خواتین مردوں کی نسبت آکسیجن پراسیس کرنے میں تقریباً 30 فیصد بہتر ہیں۔ خواتین کا ایروبک سسٹم مردوں کی نسبت بہتر اور زیادہ فعال ہوتا ہے جو زیادہ تیزی کے ساتھ خون سے عضلات میں آکسیجن کی منتقلی کو یقینی بناتا ہے۔ یہ دلچسپ تحقیق سائنسی جریدے ’اپلائیڈ فزیالوجی، نیوٹریشن، اینڈ میٹابولزم‘ میں شائع کی گئی ہے۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں