مردہ خانے کے مالک کا بیٹا باپ کے کاروبار سے مردوں کے اعضاءچرا کر ایسی شرمناک ترین چیز بناتا پکڑا گیا کہ سن کر ہی ہر شخص توبہ پر مجبور ہوجائے

ڈیلی بائیٹس

ملواکی(نیوز ڈیسک) امریکا میں ایک مردہ خانے کے مالک کا بیٹا خواتین کی لاشوں کے اعضاءکاٹ کر ان سے ایک ایسی شرمناک چیز بنانے کے الزام میں پکڑا گیا ہے کہ جان کر ہر کسی کے رونگٹے کھڑے ہو گئے ہیں۔ اے بی سی نیوز کے مطابق 38 سالہ سٹیون ایڈمز اپنے والد کی ریٹائرمنٹ کے بعد گزشتہ دو سال سے ’ایڈمز سنز فیونرل ہوم‘ کو بطور ڈائریکٹر چلارہا تھا۔ حال ہی میں ایک 27 سالہ لڑکی کی موت کی تحقیق کے سلسلہ میں اس کی قبر کشائی کرکے لاش نکالی گئی لیکن تفتیش کار اس کے کچھ اعضاءغائب دیکھ کر حیران رہ گئے۔ جب اس معاملے کی تفتیش شروع کی گئی تو اس معاملے میں سٹیون کے ملوث ہونے کے شواہد ملے۔

’جن لوگوں سے مجھے نفرت ہوتی ہے میں ایک دفعہ انہیں گلے ضرور لگاتا ہوں تاکہ یہ پتہ چل سکے کہ۔۔۔‘ آدم خور آدمی نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر انسان کے واقعی ہوش اُڑ جائیں
پولیس نے جب اس کے گھر کی تلاشی لی تو تہہ خانے سے ایک جنسی گڑیامل گئی، لیکن اہلکار یہ دیکھ کر کانپ اٹھے کہ اسے بنانے کے لئے حقیقی انسانی اعضاءاستعمال کئے گئے تھے۔ جب سٹیون سے پوچھ گچھ کی گئی تو یہ لرزہ خیز انکشاف سامنے آیا کہ وہ ایک عرصے سے انسانی اعضاءکو اپنی جنسی ہوس کے لئے استعمال کررہا تھا۔ اس نے بتایا کہ وہ خواتین کی لاشوں سے اعضاءکاٹ کر پلاسٹک کے ایک بیگ میں بھر کر اپنے تہہ خانے میں لے آتا تھا اور پھر انہیں اکٹھا کرکے اپنے لئے جنسی گڑیا بناتا تھا۔

ڈیلی پاکستان کے یو ٹیوب چینل کو سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں
بدبخت ملزم نے یہ اعتراف بھی کیا ہے کہ اس کا ایک شیطانی جماعت سے رابطہ ہے، جس کے ارکان سے رقم لے کر وہ انہیں خواتین کی لاشوں کے ساتھ بدفعلی کی اجازت دیتا رہا ہے۔ ملزم پولیس کی حراست میں ہے اور اس کے خلاف مزید تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے۔