’شادی کروں گی تو دھوم دھام سے۔۔۔‘ وہ لڑکی جو شان و شوکت سے شادی کرنے کیلئے منگنی کے بعد 17 برس بعد تک پیسے جمع کرتی رہی بالآخر وقت آیا تو شادی کی تقریب سے چند گھنٹے پہلے ایسا کام ہوگیا کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہوجائیں گی

ڈیلی بائیٹس

کیپ ٹاﺅن (نیوز ڈیسک) سچ ہی کہتے ہیں کہ انسان جب سو برس کا سامان کرنے کی تگ و دو میں لگا ہوتا ہے تو اسے اگلے پل کی خبر نہیں ہوتی اور ہزار حسرتیں دل میں ہی ہوتی ہیں کہ اجل زندگی کی بساط لپیٹنے آن پہنچتی ہے۔ ایک ایسا ہی المناک واقعہ جنوبی افریقہ کے شہر ڈربن سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کے ساتھ پیش آیا جو گزشتہ 17سال سے اپنی شادی کے لئے رقم جمع کررہی تھی لیکن جب شادی کا وقت آیا تو دلہن بننے کی بجائے منوں مٹی تلے جاسوئی۔

جنازے پر لی گئی تصویر میں تابوت میں لیٹی خاتون مردہ نہیں، پھر ایسے کیوں لیٹی ہے؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کردے گا
ویب سائٹ WWWNکی رپورٹ کے مطابق نانا ماخیزے نامی لڑکی کی منگنی فانا مافوملو نامی شخص سے 17 سال قبل ہوئی۔ ماخیزے کا خواب تھا کہ اس کی شادی خوب دھوم دھام سے ہو اور اس موقع کی شان و شوکت قابل دید ہو۔ اس مقصد کے لئے دونوں نے انتظار کرنے اور رقم جمع کرنے کا فیصلہ کیا۔ تقریباً دو دہائیوں تک دونوں سخت محنت مشقت کرکے پیسہ جمع کرتے رہے اور حال ہی میں بالآخر انہوں نے شادی کی شاندار تقریب کا اہتمام کیا۔ شادی کے دن سینکڑوں مہمان ڈربن شہر کے کلوف سوک سنٹر میں انتہائی خوبصورتی سے سجائے گئے شادی ہال پہنچے، لیکن ہر کوئی یہ دیکھ کر غمزدہ ہوگیا کہ ماخیزے عروسی جوڑے کی بجائے کفن پہن کر تابوت میں لیٹی تھی۔
اس کے منگیتر مافوملو کے مطابق شادی سے ایک رات پہلے ماخیزے کی طبیعت اچانک بگڑی اور اسے ہسپتال لیجایا گیا لیکن وہ دیکھتے ہی دیکھتے دنیا سے رخصت ہوگئی۔ مافوملے نے اس اندوہناک سانحے پر فیصلہ کیا کہ وہ اپنی منگیتر کی خواہش کا احترام کرتے ہوئے اس کی شادی کے دن اسے انتہائی خوبصورتی سے سجائی گئی تقریب میں ضرور لائے گا، جو اسی کے لئے سجائی گئی تھی۔ شادی ہال کو بھرپور طریقے سے سجایا گیا تھا اور سب مہمان بھی آئے، لیکن خوشیوں کے شادیانے بجاتے ہوئے دلہن کو رخصت کرنے کی بجائے سب اس کا تابوت اٹھا کر قبرستان گئے اور تدفین کے بعد آنسو بہاتے ہوئے گھروں کو لوٹ گئے۔