’میں بس پر بیٹھی تو ساتھ کھڑے شخص نے مجھے بوتل کی پیشکش کی، میں نے انکار کردیا تو وہ یہ شرمناک کام کرنے لگا، ڈرائیور کو شکایت لگائی تو مدد کرنے کی بجائے اس نے۔۔۔‘ نوجوان لڑکی نے اپنے ساتھ پیش آنے والا ایسا واقعہ سنادیا کہ جان کر ہر مرد شرمندہ ہوجائے

ڈیلی بائیٹس

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک لڑکی کو بس میں دوران سفر ایک اوباش نے جنسی طور پر ہراساں کرنا شروع کر دیا۔ جب لڑکی نے بس ڈرائیور سے اس کی شکایت کی تو ڈرائیور نے بھی ایسی شرمناک بات کہہ دی کہ ہر سننے والا غضبناک ہو جائے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ لندن میں پیش آیا جہاں نتھالی گورڈن نامی لڑکی بس میں سفر کر رہی تھی۔ اس دوران اس کے سامنے بیٹھے شخص نے اسے اپنے ساتھ مشروب پینے کی دعوت دی جو نتھالی نے نرمی سے مسترد کر دی۔ اس پر اس شخص نے نتھالی کو ہراساں کرنا شروع کر دیااور اس کے جسم کو چھونے لگا۔

جسم فروش خواتین سے تعلق قائم کرکے رقم کی ادائیگی نہ کرنے والوں کے ساتھ کیا ہوتا ہے؟ یہ خبر پڑھ کر آپ کو بھی سمجھ آجائے گی
رپورٹ کے مطابق نتھالی نے بس ڈرائیور کو اس کی شکایت کی تو ڈرائیور کہنے لگا کہ ”تم خوبصورت لڑکی ہو، تمہیں اس شخص سے الگ کسی اور جگہ پر بیٹھنا چاہیے۔“ ڈرائیور کا یہ جواب سن کر نتھالی نے اپنا موبائل فون نکالا اور تمام کہانی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان کر دی جو جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور ایک ہنگامہ برپا ہو گیا۔ اس نے ٹوئٹر پر لکھا کہ ”میں بس ڈرائیور کے پاس یہ سوچ کر گئی تھی کہ اچھے مرد بھی ہوتے ہیں جو ایسے مواقع پر خواتین کی طرف داری کرتے ہیں لیکن وہ بھی ویسا ہی نکلا۔ یہ مرد کبھی نہیں سمجھ سکتے کہ عورت ہونا کیا ہوتا ہے۔“ رپورٹ کے مطابق نتھالی کی یہ ٹویٹس برطانوی ٹرانسپورٹ پولیس نے بھی دیکھ لی ہیں اور انہیں انتہائی سنجیدگی سے لے رہی ہے۔