دنیا کے امیر ترین ارب پتی اپنے بچوں کو دھڑا دھڑ یہ ایک زبان سکھارہے ہیں، کونسی زبان ہے؟ جان کر آپ بھی اپنے بچوں کے لئے فوری یہ کام کریں گے

ڈیلی بائیٹس

بیجنگ(نیوز ڈیسک)چین کی معاشی اور عسکری قوت تو پہلے ہی سپر پاور امریکہ کے لئے خطرہ بن چکی تھی لیکن اب اس کی زبان نے بھی انگریزی کی مقبولیت کو چیلنج کردیا ہے۔ دی انڈیپینڈنٹ کے مطابق دنیا بھر کے دولت مند لوگ اپنے بچوں کو دھڑا دھڑ چینی مندارن زبان سکھارہے ہیں اور اس کی وجہ بھی انتہائی دلچسپ ہے۔
ماہرین لسانیات کا کہنا ہے کہ دماغ کو تیز کرنے، معلومات کا ذخیرہ بڑھانے اور ذہنی استعداد کو جلا بخشنے میں چینی مندارن زبان بہت مددگار ثابت ہوسکتی ہے۔ یہ دنیا کی سب سے بڑی زبان ہے جس کے بولنے والوں کی تعداد تقریباً سوا ارب ہے۔ اس کی دو مختلف بولیاں مندارن اور کینٹو نیز ہیں لیکن ان میں سے مندارن بولنے والوں کی تعداد تقریباً ایک ارب سے زائد ہے۔ ماہرین لسانیات کے مطابق اس زبان کے بولنے والوں کی تعداد اتنی زیادہ ہے کہ آنے والے دور میں کسی بھی اور زبان کے لئے اس کی اہمیت اور مقبولیت کا مقابلہ کرنا مشکل ہوگا۔

’اگر خواتین نے اس رنگ کا لباس پہنا ہو تو بات کرنے کی کوشش کرنے والے اجنبی مردوں کی تعداد بہت بڑھ جاتی ہے‘
چینی مندارن زبان کے مداحوں میں ایمزون کے بانی ارب پتی جیف بیزف اور ان کی اہلیہ مکینزی بھی شامل ہیں۔ وہ کہتے ہیں کہ اپنے بچوں کو بیرون ملک سفر اور سائنسی پروگراموں میں شمولیت کروانے کے ساتھ وہ انہیں چینی مندارن زبان کی تعلیم بھی دلوارہے ہیں۔


فیس بک کے سی ای او مارک زکربرگ بھی چینی زبان کے زبردست مداح ہیں۔ انہوں نے تو اس زبان میں اتنا عبور حاصل کرلیا ہے کہ اکثر سوشل میڈیا پر سوال و جواب کی نشست میں روانی سے چینی مندارن زبان استعمال کرتے ہیں۔ وہ نہ صرف خود اس زبان کو بہت پسند کرتے ہیں بلکہ اپنی بیٹی میکس زکربرگ کو بھی یہ زبان سکھارہے ہیں۔


امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ اور ان کے شوہر جیرڈ کشنر کے تین بچوں کو بھی چینی مندارن زبان سکھائی جارہی ہے۔ اس مقصد کے لئے انہوں نے چینی زبان میں مہارت رکھنے والی ایک خاتون ٹیوٹر کی خدمات حاصل کررکھی ہیں۔ ان کی پانچ سالہ بیٹی ایرا بیلا نے حال ہی میں چینی زبان میں گائے گئے ’ہیپی نیوایئر‘ نغمے کی ویڈیو بھی پوسٹ کی ہے ۔ یہ ویڈیو ساری دنیا میں بہت مقبول ہوئی ہے، اور چینی صدر بھی اس کی تعریف کئے بغیر نہیں رہ سکے۔