یہ 5.5 کلو کی رسولی ڈاکٹروں نے نوجوان لڑکی کے جسم کے کس حصے سے نکالی؟ پیٹ سے نہیں بلکہ۔۔۔ جواب جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا

ڈیلی بائیٹس

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی شہر ممبئی کی ایک لڑکی کو درد کی شکایت رہتی تھی اور محسوس ہوتا تھا کہ جسم میں دائیں طرف کوئی گلٹی ہے۔ اسے جب ڈاکٹروں کے پاس لیجایا گیا اور سکین کیا گیا تو جسم میں ایسی چیز کی موجودگی کا انکشاف ہوا کہ ایک لمحے کے لیے تو ڈاکٹر بھی سکتے میں چلے گئے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 28سالہ منجو دیوی نامی اس لڑکی کے دائیں گردے میں ایک رسولی موجود تھی جس کا سائز گردے کے سائز سے 50گنا بڑا تھا اور اس کا وزن ساڑھے پانچ کلوگرام تھا حالانکہ ایک نارمل شخص کے گردے کا وزن صرف 110سے 140گرام تک ہوتا ہے۔

15 سالہ لڑکے کو ہر وقت قبض کی شکایت، ڈاکٹروں نے سرجری کی تو پیٹ میں کیا مُردہ چیز پڑی مل گئی؟ دیکھ کر ڈاکٹروں کے بھی ہوش اُڑگئے کیونکہ۔۔۔
رپورٹ کے مطابق منجو دیوی کے گردے میں موجود رسولی کی لمبائی 31سنٹی میٹر اور چوڑائی 19سینٹی میٹر تھی۔ لوک مانیا تلک میونسپل جنرل ہسپتال کے ماہر سرجنز کی ٹیم نے 8گھنٹے طویل آپریشن کرکے اس کے گردے سے یہ ٹیومر نکالا۔ ڈاکٹروں نے اس موقع پر گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ والوں کو بھی بلا رکھا تھا کیونکہ منجو دیوی کے گردے میں موجود ٹیومر دنیا کا سب سے بڑا ٹیومر تھا۔ گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کی طرف سے بھی تصدیق کر دی گئی ہے کہ اس سے قبل اتنا بڑا ٹیومر کسی مریض میں نہیں پایا گیا۔منجو کا آپریشن کرنے والی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر اجیت سیوانت کا کہنا تھا کہ ”اتنے بڑے ٹیومر کے باعث اس کے جسم کو اس قدر نقصان پہنچ چکا ہے کہ اب وہ کبھی معمول کی زندگی نہیں گزار سکے گی اور گھر کے کام کاج نہیں کر سکے گی، تاہم اس کی زندگی خطرے سے باہر ہے۔“