بہاولپور میں دولہے نے شادی کے بعد ایسی حرکت کردی کہ دلہن کے پیروں تلے زمین نکل گئی، کبھی سوچ بھی نہ سکتی تھی کہ۔۔۔

ڈیلی بائیٹس

بہاولپور(ڈیلی پاکستان آن لائن)شادی کا بندھن ایک مقدس رشتہ تصور کیا جاتاہے لیکن بعض لالچی افراد کی گھناﺅنی حرکات نے اس رشتے کے تقدس کو بھی پامال کرنا شروع کردیا ، ایسا ہی کچھ بہاولپور کی لڑکی کیساتھ ہوا جو جس کا دولہا شادی کے بعد گھر کا سامان لے کر ہی رفوچکر ہوگیا۔
تفصیلات کے مطابق ہما نامی لڑکی کی اپنے انگلش ٹیوٹر سکندر نامی شخص سے شادی ہوئی تھی جو کورٹ میرج کے بعد اپنی بیوی ہما کو  چیمہ ٹاﺅن کے علاقے میں کرائے کے گھر میں رخصت کرکے لے کر گیا تھا لیکن خود دولہا اور سسرالی ہی اپنی بہو کے 47 ہزار نقدی، لیپ ٹاپ اور دیگر سامان اٹھا کر فرار ہوگئے۔ متاثرہ لڑکی ہما اپنے اہل خانہ کے ہمراہ کارروائی کے لیے تھانہ صدر پہنچ گئی۔


سوشل میڈیا پر وائرل ہونیوالے ویڈیو پیغام میں ہمانے بتایاکہ ” ایک لڑکے کے پاس وہ انگلش سیکھنے جاتی تھی جس نے اسے شادی کیلئے پروپوز کیا، اہلخانہ سے بات کی تو یہ نہیں مانے لیکن بالآخر اجازت دیدی ۔اب لڑکے کے والدین نہیں مان رہے تھے ، ڈیڑھ سال انتظار کے بعد ایک جامع مسجد میں گئے جہاں ایک قاری اور ایک بچے کو دولہا نے بلایا اور نکاح کیا لیکن دراصل یہ سب ڈرامہ تھا جس کا دستاویزی ثبوت بھی نہیں تھا اور نہ ہی پورے گواہ ، اس کے بعد وہ شادی سے ہی مکرگیا اور رابطہ ختم ہوگیا، دوبارہ اس نے رابطہ کیا اور عدالت میں آکر باضابطہ شادی کی لیکن پھر ۔۔۔ میراجسم کانپ رہاہے ، مزید بات نہیں ہوتی “۔جس کے بعد ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ متاثرہ لڑکی کی والدہ اپنی بیٹی کے ساتھ کھڑی ہو جاتی ہے اور ہما اپنے چہرے پر دونوں ہاتھ رکھ کر رونا شروع کر دیتی ہے ۔جیسے ہی اس کی ماں اپنی بیٹی کے ساتھ ہونے والی زیادتی کے بارے میں بتانے لگتی ہے تو ہما ہمت کر کے ایک بار پھر شوہر کے ہاتھوں  اپنے اوپر ہونے والے ظلم کی کہانی بیان کرنا شروع کر دیتی ہے ۔دوسری طرف متاثرہ لڑکی ہما  کے اہلخانہ کاکہناتھاکہ ” قانونی کارروائی کیلئے بہاولپور پولیس تھانہ صدر میں درخواست دیدی اور مقدمہ بھی درج کرلیا گیا ہے ۔