’ڈائٹنگ کے باوجودچند ماہ میں میرا وزن 76 کلو بڑھ گیا، ڈاکٹر کے پاس جاتی تو وہ کہتا تھا چھپ چھپ کر کھاتی ہو، بالآخر معائنہ کیا گیا تو ایسی وجہ سامنے آگئی کہ زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، کبھی سوچا بھی نہ تھا موٹاپے کی یہ وجہ بھی ہوسکتی ہے کہ۔۔۔‘

ڈیلی بائیٹس

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون کا اچانک وزن بڑھنا شروع ہو گیا اور حیران کن طور پر صرف 18ماہ میں 80کلوگرام اضافے کے ساتھ 177کلوگرام تک جا پہنچا۔ وہ ڈاکٹر کے پاس گئی اور بتایا کہ وہ روزانہ صرف 1ہزار کیلوریز لے رہی ہے لیکن ڈاکٹر نے اس کی بات ماننے سے انکار کر دیا اور کہا کہ تم جھوٹ بول رہی ہو، تم بہت زیادہ کھا رہی ہو، اسی لیے اتنا وزن بڑھ رہا ہے۔ کچھ دن بعد جب خاتون کے ٹیسٹ کیے گئے تو اس کا وزن بڑھنے کی ایسی وجہ سامنے آ گئی کہ ڈاکٹر بھی ششدر رہ گئے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق برطانوی شہر سٹوڈلے کی 33سالہ نتالی سٹوکس نامی اس خاتون کے دماغ میں ایک کمیاب قسم کا ٹیومر تھا جس کی وجہ سے اس کا وزن اس قدر تیزی سے بڑھ رہا تھا۔

’جسم کی چربی سے تنگ آکر میں نے یہ ایک چیز کھانا چھوڑ دی اور 41 کلو وزن کم کر ڈالا‘
نتالی کا کہنا تھا کہ ”چند ماہ میں میرا وزن بہت زیادہ بڑھ گیا تھا اور ڈاکٹر میری بات ماننے کو تیار نہیں تھے۔ وہ کہتے تھے کہ میں بہت زیادہ کھانا کھارہی ہوں اور ان سے جھوٹ بول رہی ہوں۔ میں نے اپنے وزن کو کم کرنے کی بہت کوشش کی، سخت ڈائٹنگ کی اور کڑی ورزشیں کرتی رہی لیکن وزن بڑھتا ہی چلا گیااور چند ماہ میں 177کلوگرام سے زیادہ ہو گیا۔ پھر میرے جی پی نے مجھے سپیشلسٹ کے پاس ریفر کر دیا جس نے میرے ٹیسٹ اور ایم آرآئی سکین کروایا۔ سکین میں میرے موٹاپے کی وجہ معلوم ہو گئی۔“ رپورٹ کے مطابق تشخیص کے بعد ڈاکٹروں نے آپریشن کرکے نتالی کے دماغ سے ٹیومر نکال دیا جس کے بعد اس کا وزن کم ہونا شروع ہو گیا، جو اب صرف 95کلوگرام رہ گیا ہے۔