7 بچیوں کی پیدائش کے بعد میاں بیوی نے لڑکے کی خواہش میں ایسا شرمناک کام کردیا کہ گرفتار کرلیا گیا

ڈیلی بائیٹس

بیجنگ (نیوز ڈیسک) مشرقی معاشروں میں بیٹے کی خواہش اس قدر شدت سے پائی جاتی ہے کہ بعض اوقات لوگ اپنی یہ خواہش پوری کرنے کے لئے سنگین جرائم کا ارتکاب بھی کر بیٹھتے ہیں۔ ایک ایسا ہی افسوسناک واقعہ چین کے صوبہ گوانگ ڈونگ میں سامنے آیا ہے، جہاں ایک جوڑے نے بیٹے کی خواہش میں پے در پے سات بیٹیاں پیدا کر ڈالیں، اور بالآخر مایوس ہو کر سمگلروں سے ’بیٹا‘ خرید لیا۔
ویب سائٹ shanghaiist.com کی رپورٹ کے مطابق شین نام شخص نے سمگلروں کے ایک گروہ کو 92000 یوان ادا کر کے ان سے ایک بچہ خریدا، لیکن یہ بچہ گھر لے جانے سے پہلے ہی پولیس اس تک پہنچ گئی۔ شین اور اس کی اہلیہ گزشتہ کئی سال سے بیٹے کے حصول کے لئے کوشاں تھے، لیکن ہر بار ان کے ہاں بیٹی نے جنم لیا۔ بالآخر جب وہ سات بیٹیوں کے والدین بن گئے تو انہوں نے بیٹا خریدنے کا فیصلہ کیا، اور اس کے لئے انہیں واحد حل بچے فروخت کرنے والے سمگلر ہی نظر آئے۔

’تم بھی لڑکوں کے باتھ روم میں جاﺅ اور وہاں۔۔۔‘ سکول میں ٹیچر نے معصوم سی بچی کو ایسی شرمناک ترین سزا دے دی کہ سن کر ہی انسان کا چہرہ لال ہوجائے
گرفتاری کے بعد شین نے مﺅقف اختیا رکیا ہے کہ اسے معلوم نہیں تھا کہ اسے بچہ دینے والے لوگ سمگلر تھے۔ اس کا کہنا ہے کہ اس سے رقم بچے کو گود لینے کی فیس کے طور پر لی گئی تھی، تاہم پولیس کا کہناہے کہ یہ بات ماننے کے قابل نہیں ہے کہ وہ اصل حقائق سے لاعلم تھا۔ سمگلروں نے جو بچہ شین کو فروخت کیا اس کا تعلق صوبہ ہونان سے ہے، تا ہم اس کے اصل والدین کو تاحال تلاش نہیں کیا جا سکا۔