ایک تربوز کی خریداری نے آدمی کو 75 لاکھ روپے کا مالک بنادیا، ایسا واقعہ کہ جان کر آپ بھی کہیں گے قسمت ہو تو ایسی

ڈیلی بائیٹس

واشنگٹن(نیوز ڈیسک)اول تو تربوز کی خریداری کا کسی حادثے میں بدل جانا ہی ایک حیران کن بات ہے لیکن اس حادثے کے نتیجے میں متاثرہ شخص کو لاکھوں روپے بھی ملا جائیں، یہ تو اور بھی زیادہ حیرت کی بات ہے۔ حیرت در حیرت کا یہ انوکھا واقعہ امریکی ریاست الباما میں پیش آیا، جہاں ایک صاحب مشہور شاپنگ سٹور والمارٹ میں تربوز خریدتے ہوئے پھسل کر گرے اور کولہے کی ہڈی تڑوا بیٹھے۔ ہینری واکر نامی اس شخص نے والمارٹ کو حادثے کا ذمہ درار قرار دیتے ہوئے زرتلافی کے لئے عدالت سے رجوع کرلیا، اور عدالت نے بھی کمال فیاضی کا ثبوت دیتے ہوئے اسے 75 ہزار ڈالر (تقریباً 75 لاکھ پاکستانی روپے)کا حقدار قرار دے دیا۔

16 سالہ لڑکے کے پیٹ میں مسلسل درد، سرجن نے آپریشن کیا تو اندر ایک کلو وزنی کیا چیز موجود تھی؟ دیکھ کر اس کے بھی ہوش اُڑ گئے کیونکہ۔۔۔
خلیج ٹائمز کے مطابق والمارٹ کے ترجمان نے اس فیصلے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ زرتلافی کی رقم بے حد زیادہ ہے اور کمپنی اس فیصلے کے خلاف اپیل کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ ہینری نے عدالت میں دائر کئے گئے مقدمے میں موقف اختیار کیا تھا کہ جب وہ تربوز کے ڈھیر سے ایک تربوز اٹھانے کی کوشش کررہا تھا تو نیچے بچھی چٹائی میں اس کا پاﺅں الجھا اور فرش پر گرکر وہ کولہے کی ہڈی تڑوا بیٹھا، جو اس کے خیال میں سراسر والمارٹ سٹور کی لاپرواہی کی وجہ سے ہوا۔ ہینری کے وکیل کا کہنا تھا کہ اگر وہاں وہ چٹائی موجود نا ہوتی تو ہینری کا پاﺅں نہ پھسلتا اور یہ حادثہ پیش نہ آتا۔
دوسری جانب والمارٹ نے موقف اختیار کیا کہ تربوز رکھنے کا انتظام ہرگز غیر محفوظ نہیں تھا اور یہ ایک اتفاقی حادثہ تھا۔ عدالت نے ہینری کا موقف تسلیم کرتے ہوئے اسے 75 ہزار ڈالر زرتلافی کا حقدار قرار دیا، جس کے خلاف متوقع طور پر والمارٹ کی جانب سے اپیل دائر کی جائے گی۔