انتہائی قدیم عمارت میں ماہرین کو 100سال پرانا فروٹ کیک مل گیا، لیکن جیسے ہی اسے اٹھا کر دیکھا تو ایسا انکشاف کہ ہر کسی کا منہ کھلا کا کھلا رہ گیا، کوئی خوابوں میں بھی نہ سوچ سکتا تھا کہ ایک کیک۔۔۔

ڈیلی بائیٹس

ناروے(نیوز ڈیسک) فروٹ کیک زیادہ سے زیادہ کتنے عرصے تک کھانے کے قابل رہ سکتا ہے؟ اس سوال کا جواب چند گھنٹے یا چند دن تو ہو سکتا ہے لیکن یقینا کوئی تصور بھی نہیں کر سکتا کہ فروٹ کیک ایک صدی تک بھی خراب ہونے سے محفوظ رہ سکتا ہے۔ قطب جنوبی کے برف زار انٹارکٹیکا میں تحقیق کرنے والے ماہرین نے کچھ ایسا ہی حیرت انگیز انکشاف کر ڈالا ہے، جن کا کہنا ہے کہ انہیں ایک صدی پرانا ایسا فروٹ کیک ملا ہے جو اب بھی کھائے جانے کے قابل ہے۔

جھیل پر چھٹیاں منانے گئے سیاحوں کو پانی کے نیچے پورا ہوائی جہاز ڈوبا ہوا نظر آگیا، یہ کونسا جہاز ہے اور جھیل میں کیسے اور کب آگرا؟ جان کر آپ کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا
نیشنل جیوگرافک کی رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ کے ادارے انٹارکٹک ہیریٹیج ٹرسٹ کے تحقیق کاروں کو یہ کیک انٹارکٹیکا میں ایک قدیم عمارت کے اندر کاغذ اور دھاتی پرت میں لپٹا ہوا ملا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ اس کیک میں سے آنے والی خوشبو کو اب بھی محسوس کیا جاسکتا ہے اور یہ تقریباً ٹھیک حالت میں ہے۔ اس پر برطانوی بسکٹ کمپنی ’ہنٹلی اینڈ پامرز‘ کا نشان بھی موجود ہے۔


تحقیق کاروں کا خیال ہے کہ انٹارکٹیکا کے برفیلے اور غیر معمولی ٹھنڈے ماحول نے اس کیک کو خراب ہونے سے محفوظ رکھا ہے۔ یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ 1910ءسے 1913ءکے درمیان برطانوی مہم جو رابرٹ فیلکن سکاٹ اس علاقے میں ایک مہم کے سلسلے میں آیا تھا اور غالباً وہی اس کیک کو اپنے ساتھ لایا تھا۔ تاریخی حوالوں سے بھی معلوم ہوا ہے کہ رابرٹ فروٹ کیک کا بہت شوقین تھا اور وہ اپنی مہم کے دوران خاص طور پر کیک اپنے ساتھ لے کر گیا تھا۔