شہری کی رکشے میں بیٹھی لڑکی کو دیکھ کر سڑک پر ہی شرمناک حرکت، لڑکی نے تصویر کھینچ کر ایسی جگہ بھیج دی کہ آدمی نے کبھی خوابوں میں بھی نہ سوچا ہوگا، اب کبھی ایسا خیال بھی دل میں نہ آئے گا

ڈیلی بائیٹس

نئی دلی (نیوز ڈیسک)بھارت میں خواتین کی عزت پر حملے کرنے والے مجرم اس قدر نڈر ہوچکے ہیں کہ ممبئی شہر میں ایک بدبخت شخص نے رکشہ سوار دو نوجوان لڑکیوں کے سامنے اپنی پتلون کھول کر سر عام بے حیائی کا مظاہرہ شروع کردیا، لیکن لڑکیوں نے بھی ہمت کا مظاہرہ کیا اور اس بدمعاش کی تصویر کھینچ کر فوری طور پر پولیس کو بھیج دی۔
اخبار ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق لڑکیاں آٹو رکشے میں سفر کررہی تھیں کہ اس دوران موٹرسائیکل سوار ایک نوجوان ان کے برابر چلنے لگا۔ شیطان صفت نوجوان ناصرف لڑکیوں پر بیہودہ جملے کس رہا تھا بلکہ اس نے ایک ہاتھ سے موٹرسائیکل چلاتے ہوئے دوسرے ہاتھ سے اپنی پتلون کھولی اور سرعام شیطانی حرکت کا مظاہرہ کرنے لگا۔ لڑکیوں نے حاضر دماغی سے کام لیتے ہوئے اپنے موبائل فون سے ناصرف بدبخت نوجوان کی تصویر بنالی بلکہ اس کی موٹرسائیکل کا نمبر بھی نوٹ کرلیا۔ انہوں نے یہ تصویر فوری طور پر ممبئی پولیس کے ٹویٹر اکاﺅنٹ پر بھیج دی۔ پولیس نے بھی فوری ایکشن لیتے ہوئے محض تین گھنٹے کے دوران ہی شیطان صفت شخص کو گرفتارکرلیا۔ ممبئی پولیس کے مطابق 35 سالہ ملزم کا نام رئیس لیاقت قریشی ہے اور اس کا تعلق ممبئی کے علاقے باندرا سے ہے۔

آزادی کے نام پر سڑکوں پر سرعام لوگوں کو شیشے کے ڈبے میں شرمناک کام پر اُکسانے والی نوجوان لڑکی کو گرفتار کرلیا گیا
انٹرنیٹ صارفین کا کہنا ہے کہ بھارت کی سڑکوں پر خواتین کو ایسے شرمناک حالات کا سامنا ہر روز کرنا پڑتا ہے لیکن یہ لڑکیاں تعریف کی مستحق ہیں کہ انہوں نے ہمت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس بدبخت شخص کی تصویر عین اس وقت بنالی جب یہ ان کے سامنے بے حیائی کا مظاہرہ کررہا تھا۔ پولیس نے بھی لڑکیوں کی ہمت اور حاضر دماغی کو سراہتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اپنے جیسی دیگر لڑکیوں اور خواتین کے لئے مثال قائم کردی ہے۔