دبئی میں پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور کو نیپالی نے مار مار کر اس کا حشر نشر کر دیا ، لیکن کس معمولی سی بات پر یہ کام کیا؟ جان کر آپ کو بھی بے حد افسوس ہو گا

ڈیلی بائیٹس

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) رزق حلال کی تلاش میں دبئی کی سڑکوں پر سرگرداں ایک پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور کے ساتھ ایک نیپالی ٹیکسی ڈرائیور نے معمولی سی بات پر وہ ظلم کر دیا کہ سن کر انسان کا دل کانپ جائے۔ دونوں کے درمیان ٹیکسی قطار میں کھڑی کرنے پر جھگڑا ہوا جس کا انجام پاکستانی ڈرائیور کی معذوری کی صورت میں سامنے آیا۔ 

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق 29 سالہ نیپالی ڈرائیور نے 26 سالہ پاکستانی ڈرائیور کو ٹیکسی کھڑی کرنے کیلئے جگہ دینے سے انکار کر دیا تھا جس پر پاکستانی ڈرائیور نے اسے برا بھلا کہا لیکن وہ غصے میں ایسا بے قابو ہوا کہ پاکستانی ڈرائیور کے منہ پر گھونسوں کی بارش کر دی ۔ رپورٹ کے مطابق پاکستانی ڈرائیور گاڑی سڑک کنارے کھڑی کر کے واش روم استعمال کرنے گیا تھا۔ جب وہ واپس آیا تو نیپالی ڈرائیور نے اپنی ٹیکسی قطار میں کھڑی کر لی تھی۔ جب پاکستانی ڈرائیور نے اسے راستہ دینے کو کہا تاکہ وہ بھی اپنی گاڑی قطار میں کھڑی کر سکے تو نیپالی ڈرائیور نے انکار کر دیا۔ دونوں کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا جس پر نیپالی ڈرائیور اپنی گاڑی سے نکل آیا اور پاکستانی ڈرائیور کی گاڑی کا دروازہ زبردستی کھولنے کی کوشش کرنے لگا۔ جب پاکستانی ڈرائیور نے اپنی ٹیکسی کا دروازہ بند کرنے کی کوشش کی تو نیپالی نے اس کے منہ پر گھونسے مارنا شروع کر دیئے۔ آنکھوں اور کنپٹی پر لگنے والے گھونسوں کے باعث پاکستانی ڈرائیور بے ہوش ہو گیا۔
میڈیکل رپورٹ کے مطابق وحشیانہ تشدد سے پاکستانی ڈرائیور کا دس فیصد جسم معذور ہو گیا ہے ۔ نیپالی ڈرائیور کو عدالت میں پیش کیا گیا جہاں اس نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔ عدالت اس مقدمے کا فیصلہ 30 جولائی کو سنائے گی ۔