باپ کی موت کے بعد ایک دن خاتون نے اس کا بٹوہ کھول کر دیکھا تو اس میں ایسی تصویر نظر آگئی کہ زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا لگ گیا، کبھی سوچا بھی نہ تھا کہ اس کی۔۔۔

ڈیلی بائیٹس

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون نے اپنے باپ کی موت کے بعد ایک دن اس کا بٹوہ کھول کر دیکھا تو اس میں ایسی تصویر نظر آ گئی کہ اسے زندگی کا سب سے زور دار جھٹکا لگ گیا۔ وہ سوچ بھی نہ سکتی تھی کہ اس کے ماں باپ ایسی چیز بھی اس سے مخفی رکھ سکتے ہیں۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق بٹوے میں الیسن ہولڈرنیس نامی اس خاتون کی آنجہانی والدہ کی پرانی تصویر تھی جس نے گود میں ایک بچی کو اٹھا رکھا تھا۔ اس تصویر سے برطانوی شہر سٹیون ایج کی رہائشی الیسن پر یہ راز منکشف ہوا کہ اس کی ایک اور بہن بھی ہے جس کے متعلق اس کے ماں باپ نے اسے کبھی نہیں بتایا تھا۔ تحقیق کرنے پر اسے معلوم ہوا کہ اس کی یہ بہن گزشتہ 20سال سے ایتھوپیا میں رہائش پذیر ہے اوراس کا نام جینی ہے۔

بچوں پر نظر رکھنے کیلئے آدمی نے اپنے بچوں کے کمرے میں خفیہ کیمرہ لگادیا لیکن پھر دفتر پہنچ کر اسے آن کیا تو ایسا منظر کہ پیروں تلے زمین نکل گئی، کیا نظر آرہا تھا؟ کبھی سوچ بھی نہ سکتا تھا
رپورٹ کے مطابق جینی کو بھی اپنی بہن الیسن کے بارے میں کچھ معلوم نہیں تھا۔بالآخر دونوں بہنیں معروف ٹی وی شو ’لانگ لاسٹ فیملی‘ کے ذریعے گزشتہ دنوں زندگی میں پہلی بار ایک دوسرے سے ملیں اور تادیر ایک دوسری کو گلے لگا کر روتی رہیں۔ شو میں الیسن کا کہنا تھا کہ ”مجھے سمجھ نہیں آتی کہ میرے ماں باپ نے مجھ سے یہ بات کیوں چھپائے رکھی۔ میری ماں کا انتقال 1996ءمیں ہوا جبکہ والدکچھ عرصہ قبل دنیا سے گزرگئے۔ جینی میری سوتیلی بہن ہے۔ مجھے خدشہ تھا کہ شاید اسے میرے ماں کی طرف سے لاوارث چھوڑ دیا گیا ہو گا اور وہ اس پر بہت غصے میں ہو گی اور مجھ سے نہیں ملنا چاہے گی لیکن وہ ایتھوپیا سے آکسفورڈ آئی اور ہمارے انتہائی جذباتی ماحول میں ملاقات ہوئی۔“ الیسن نے مزید بتایا کہ ”جب میں نے اپنے باپ کے بٹوے میں یہ تصویر دیکھی تو پہلے میں سمجھی کہ یہ میں ہوں جسے میری ماں نے گود میں اٹھا رکھا ہے۔ لیکن جب میں نے تصویر کو الٹ کر دیکھا تو اس کے پیچھے میری ماں اور جینی کا نام لکھا تھا اور تاریخ1951ءکی لکھی ہوئی تھی۔ تب مجھے احساس ہوا کہ یہ میری بہن ہے جسے میری ماں نے اٹھا رکھا ہے۔“