فحش فلمیں دیکھنے والوں کیلئے انتہائی تشویشناک خبر، ایک ایسا واقعہ جو آپ کو انتہائی خوفزدہ کردے گا

ڈیلی بائیٹس

سٹاک ہوم (نیوز ڈیسک) انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والوں کو ٹیکنالوجی ماہرین کی طرف سے بار ہا خبردار کیا جاچکا ہے کہ ان کی نگرانی کی جارہی ہے اور وہ مشکل میں پھنس سکتے ہیں۔ اکثر صارفین اس بات کو نظر انداز کررہے ہیں لیکن سویڈن میں فحش مواد دیکھنے والوں کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ اس بات کا ثبوت ہے کہ شرمناک مواد سے توبہ ہی بہتر ہے۔

مزید پڑھیں:فحش فلموں کے شوقین افراد کا شرمناک علاج کرنےوالی خاتون
اخبار ’’ڈیلی میل‘‘ کے مطابق ڈینس پیٹرس نامی ہیکر اور اس کے ساتھیوں نے انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھنے والے سینکڑوں صارفین کے IP ایڈریس استعمال کرتے ہوئے ان کے گھروں اور فون نمبروں کا پتا چلالیا اور پھر انہیں بھتے کی پرچیاں بھیج دیں، جنہیں فحش فلموں کے بل کا نام دیا گیا تھا۔ اخبار کے مطابق پیٹرس اور اس کے ساتھی انٹرنیٹ پر فلمیں بھی اپ لوڈ کررہے تھے اور انہیں دیکھنے والوں کا سراغ بھی لگارہے تھے۔ اگرچہ صارفین فحش ویب سائٹوں پر اپنا کوئی سراغ نہیں چھوڑتے تھے لیکن ہیکروں کا گینگ IP ایڈریسوں کی ایک ضخیم لسٹ کو استعمال کرکے ان کے بارے میں معلومات اکٹھی کررہا تھا، یہ لسٹ سویڈن کی ایک بڑی انٹرنیٹ سروس پرووائیڈر کمپنی سے حاصل کی گئی تھی۔
اخبار کا کہنا ہے کہ مختلف ممالک میں سینکڑوں انٹرنیٹ سارفین سے بھتہ وصول کیا جاچکا ہے۔ رقم ادا کرنے سے انکار کرنے والے صارفین کو دھمکی دی جاتی تھی کہ ان کی انٹرنیٹ ہسٹری ان کے ناموں اور پتے کے ساتھ شائع کردی جائے گی۔ سویڈن کی سیکیورٹی ایجنسیوں نے طویل تحقیقات کے بعد مرکزی مجرم اور اس کے گینگ کا پتا چلالیا اور اب پیٹرسن کو دو سال قید کی سزا سنائی جاچکی ہے۔

مزید پڑھیں:فحش فلموں کے شوقین افراد کے دماغوں پر تحقیق ،نتائج جان کر ہر کوئی توبہ پر مجبور ہوجائے
پیٹرسن نے عدالت میں موقف اختیار کیا تھا کہ انٹرنیٹ صارفین نے اس کی ویب سائٹوں پر فحش مواد دیکھا تھا اور وہ ان سے بل وصول کرنے کا حق رکھتا تھا۔ٹیکنالوجی ماہرین کا کہنا ہے کہ انٹرنیٹ پرفحش مواد دیکھنے والے صارفین کو خبردار ہونے کی ضرورت ہے کیونکہ ان میں سے کسی کو بھی کسی بھی وقت نشانہ بنایا جاسکتا ہے۔