’خواتین کو مردوں سے محبت چہرہ دیکھ کر نہیں ہوتی بلکہ جسم کی یہ چیز پسند آئے تو ہوتی ہے‘ سائنسدانوں نے انتہائی دلچسپ انکشاف کردیا، سب سے بڑا معمہ حل کردیا

ڈیلی بائیٹس

پیرس (نیوز ڈیسک)خواتین کا رومانوی رویہ ہمیشہ سے ایک معمہ رہا ہے۔ کبھی یہ کہا گیا کہ خواتین مردوں کی ظاہری مردانہ خوبصورتی دیکھ کر فیصلہ کرتی ہیں تو کبھی مردوں کی دولت اور سماجی رتبے کو ان کی پسندیدگی کا اہم ترین پہلو قرار دیا گیا۔ فرانس اور پولینڈ کے سائنسدانوں نے بھی اس سوال کا جواب ڈھونڈنے کے لئے ایک تحقیق کی جس کے حیران کن نتائج اب سامنے آ گئے ہیں۔
میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ہر مرد کے جسم کی اپنی الگ خوشبو ہوتی ہے اور خواتین ان کی شکل دیکھنے سے بھی پہلے اس خوشبو کو محسوس کر لیتی ہیں۔ اگرچہ باقی باتیں بھی اپنی جگہ اہم ہیں لیکن کوئی خاتون کسی مرد کو پسند کرنے گی یا نہیں اس کا انحصار بڑی حد تک اس بات پر ہوتا ہے کہ اس کے جسم کی خوشبو خاتون کا پسند آئے گی یا نہیں۔ ماہرین نے صنف مخالف کی جانب کشش کے لئے جسمانی خوشبو کو بنیادی ترین اہمیت کا حامل قرار دیا ہے۔

’خواتین کو مَردوں میں بس ایک چیز کی تلاش ہوتی ہے اور وہ یہ کہ۔۔۔‘ جدید تحقیق میں سائنسدانوں نے ایسی انوکھی ترین بات کہہ دی کہ جان کر ہر مَرد کا منہ کھلا کا کھلا رہ جائے گا
عام طور پر ملتے جلتے چہروں والے لوگوں کی جسمانی خوشبو بھی ملتی جلتی ہوتی ہے۔ فطری طور پر ہم ایسے چہروں کی جانب زیادہ مائل نہیں ہوتے جو ہمارے اپنے چہروں سے مشابہت رکھتے ہوں۔ یعنی عام طور پر ہمارا میلان خود سے مختلف چہروں اور خود سے مختلف جسمانی خوشبو والے افراد کی جانب ہوتا ہے۔
تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ دوسروں کے بارے میں ہم اپنا پہلا تاثر ان کی جسمانی خوشبو کے علاوہ ان کی آواز سن کر بھی بناتے ہیں۔ کسی بھی شخص کی جسمانی خوشبو اس کی شخصیت، عمر، صحت اور تولیدی ذرخیزی کے بارے میں ہمیں اہم معلومات دے سکتی ہے۔ سائنسی جریدے فرنٹیئر ان سائیکالوجی میں شائع کی گئی اس تحقیق کے مطابق شریک سفر کے انتخاب کیلئے مرد بھی صنف مخالف کی جسمانی خوشبو کو اہمیت دیتے ہیں مگر خواتین میں رویہ واضح طور پر زیادہ پایا جاتا ہے۔