کیا آپ اندازہ لگاسکتے ہیں گزشتہ روز اس پینٹنگ کو کتنے ارب روپے میں بیچا گیا اور اس میں ایسی کیا خاص بات ہے کہ کوئی شخص اس کیلئے اتنے ارب روپے دینے پر تیار ہوگیا؟ جواب جان کر آپ کا اس زندگی سے اعتبار ہی اُٹھ جائے گا

ڈیلی بائیٹس

نیویارک (نیوز ڈیسک)مشہور امریکی مصور جین مائیکل باسکیاٹ کی ایک شاہکار تصویر، جسے دیکھ کر یہ اندازہ لگانا مشکل ہے کہ اس میں شاہکار والی کونسی بات ہے، گزشتہ روز 11 کروڑ ڈالر (تقریباً 11 ارب پاکستانی روپے) میں نیلام ہوگئی ہے۔
گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق یہ عصری فن پاروں میں دوسرا مہنگا ترین شاہکار قرار پایا ہے۔ یہ پینٹنگ ای کامرس آرگنائزیشن ’سٹارٹ ٹو ڈے‘ کے بانی یوساکو میزاوا نے خریدی ہے۔ میزاوا نے بتایا کہ وہ اس پینٹنگ کو پہلے جاپان کے شہر شیبا میں واقع اپنے میوزیم میں رکھیں گے اور بعدازاں اسے عام لوگوں کیلئے نمائش میں پیش کریں گے۔

’میں ایک بیوٹی سیلون پر کام کرتی تھی کہ ایک دن۔۔۔‘ فحش فلموں میں کام کرنے والی پہلی پاکستانی اداکارہ نے ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر پورا ملک حیران پریشان رہ جائے
اس پینٹنگ کی شاندار نیلامی کے بعد آرٹسٹ باسکیاٹ، جو کہ 1988ءمیں محض 27 سال کی عمر میں ہیروئن کے نشے کی زیادتی کے باعث موت کے منہ میں چلے گئے، پکاسو، گیاکو میٹی، وارہول اور فرانسس بیکن جیسی شہرہ آفاق شخصیات کی صف میں شامل ہو گئے ہیں۔