بھارتی خاتون کو نوکری کا جھانسا دے کر انسانی سمگلروں نے جنسی غلام بنا دیا

ڈیلی بائیٹس

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت میں نوکری کا جھانسا دے کر خلیجی ریاست میں انسانی سمگلروں نے فروخت کرکے جنسی غلام بنادیا۔خاتون بھارت سے دبئی گھریلو ملازمہ کے طور پر گئی، 40,000روپے تنخواہ کا جھانسا دیا گیا تھا مگر بعد ازاں ایجنٹ نے ریاض میں مقیم ایک اور ایجنٹ کے ہاتھوں بیچ دیا گیا۔ ۔ بھارت کی ریاست اندھرا پردیش ، تلنگہ، تامل ناڈو، گجرات میں انسانی سمگلروں کی سرگرمیاں عروج پر نوکری کا جھانسادے کر بھارتی خواتین کو خلیجی ممالک میں فروخت کیا جا رہا ہے ۔
بارہ ہزار کی رقم پر 9لاکھ روپے سود بنادیا،بیوہ خاتون سود خور کے خلاف عدالت پہنچ گئی
  ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق 35سالہ بھارتی خواتین کودبئی میں گھریلو ملازمہ کے طورپر لے کر جایا گیا جہاں بعد ازاں اسے فروخت کردیا گیا۔ خاتون کو خریدنے والے شہری نے اسے جنسی درندگی کا نشانہ بنایا ۔ ایک ماہ سے کم عرصے میں دو خواتین کو انسانی سمگلروں سے بازیاب کرایا گیا ہے۔

ہائی کورٹ کا بہاو الدین زکریا یونیورسٹی لاہور کیمپس میں داخلہ لینے والے فزیو تھراپی کے طلبہ کو فیسیں واپس کرنے کا حکم

سعودی عرب میں بھارتی سفارتی سفارتی اہلکار سری نواسن کے مطابق ابھی بھی بیرونی ممالک میں درجنوں بھارتی خواتین انسانی سمگلروں کے چنگل میں موجود ہیں ۔گھریلو ملازماﺅں سے جانوروں سے بدتر سلوک کیا جاتا ہے انہیں جنسی درندگی کا نشانہ بھی بنایا جاتا ہے۔بھارتی حکومت ان کے لئے کوئی اقدامات نہیں کررہی۔