’مجھے ڈاکٹروں نے بتایا کہ میرے پاس صرف 2 سال ہیں تو میں نے یہ خبر سنتے ہی سب سے پہلے اپنے شوہر کو چھوڑ دیا کیونکہ۔۔۔‘ کینسر سے متاثرہ خاتون نے ایسی بات کہہ دی کہ سن کر ہی تمام شوہروں کودن میں تارے نظر آجائیں

ڈیلی بائیٹس

لندن (نیوز ڈیسک) شمالی لندن سے تعلق رکھنے والی خاتون اینا بیل نوشیری کے ہڈیوں کے کینسر کی تشخیص ہوئی تو ڈاکٹروں نے انہیں بتایا کہ اب زندہ رہنے کیلئے ان کے پاس صرف دو سال بچے ہیں۔ اینا بیل نے یہ خبر ملنے کے بعد پہلا یہ کام کیا کہ اپنے خاوند سے علیحدگی اختیار کرلی۔
آرٹ ٹیچر اینا بیل کا کہنا ہے کہ انہیں 2010ءمیں بریسٹ کینسر بھی ہوا تھا لیکن وہ صحت یاب ہوگئیں۔ 2012ءمیں انہیں ٹانگ میں درد محسوس ہوا اور ڈاکٹروں نے معائنہ کیا تو ان کے کولہے میں کینسر کی رسولی پائی گئی۔ وہ کہتی ہیں کہ جب انہیں بتایا گیا کہ وہ مزید دو سال تک زندہ رہیں گی تو انہوں نے ان کاموں کی فہرست بنائی جو وہ دنیا سے رخصت ہونے سے پہلے کرنا چاہتی تھیں۔ ان کاموں میں سرفہرست خاوند سے علیحدگی تھی۔

نوجوان لڑکی نے دولہا کے بغیر ہی شادی کا شوٹ کرواڈالا، لیکن کیوں؟ وجہ ایسی دردناک کہ دنیا کو رُلاکر رکھ دیا
اس فیصلے کے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا”میں نے ایک اچھی زندگی گزاری تھی لیکن اب میں خود کو اس تعلق میں قید سمجھتی تھی اور اس سے آزاد ہونا چاہتی تھی۔ مجھے معلوم تھا کہ اب میرے پاس زندہ رہنے کو کم عرصہ رہ گیا تھا تو میں نے سوچا کہ باقی عرصہ اس قید میں نہیں گزاروں گی۔ میں نے یہ قدم اٹھانے سے پہلے اپنے نوعمر بچوں سے بات کی ۔ میں ان کی مرضی کے بغیر یہ کام نہیں کرنا چاہتی تھی۔ میں نے پہلے ایک فلیٹ خریدا اور اپنے خاوند کو بتایا کہ میںا سے چھوڑ رہی ہوں۔ میں نہیں چاہتی تھی کہ میں باقی دو سال بھی اسی گھر میں گزاروں اور ہر روز کھانے پکاتے ہوئے اور گھر کی دیکھ بھال کرتے ہوئے گزرجائے۔ میں اسے چھوڑ کر کسی اور سے شادی نہیں کرنا چاہتی تھی بس اپنی شادی شدہ زندگی کا اختتام کرنا چاہتی تھی۔ یہ فیصلہ بہت اچھا ثابت ہوا اور میں اب پرمسرت زندگی گزاررہی ہوں۔ مجھے ڈاکٹروں نے 2012ءمیں مزید دو سال زندہ رہنے کا وقت دیا تھا لیکن میں اب بھی اس دنیا میں موجود ہوں۔“