نوجوان لڑکا لڑکی گھر سے بھاگ گئے، چند ہی دن بعد گھر والوں نے ڈھونڈ نکالا، لیکن پھر گاﺅں واپس لاکر سب کے سامنے ایسے شرمناک ترین کام پر مجبور کردیا کہ سن کر ہر انسان کانوں کو ہاتھ لگانے پر مجبور ہوجائے

ڈیلی بائیٹس

جے پور (نیوز ڈیسک) بھارتی ریاست راجستھان کے ایک دور دراز گاﺅں میں ایک نوعمر جوڑے پر ان کے اپنوں نے ہی ایسا ظلم ڈھادیا جس کی توقع بدترین دشمن سے بھی نہیں کی جاسکتی۔ ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے بانسوارا شہر کے گاﺅں شامبو پورہ سے تعلق رکھنے والا ایک لڑکا اور اس کی کزن 25 دن قبل گاﺅں سے فرار ہوگئے۔ وہ شادی کرنا چاہتے تھے لیکن ان کے گھر والے اس پر تیار نہ تھے۔
لڑکی اور لڑکے کے فرار ہوجانے پر ان کے خاندان والوں نے پولیس کو رپورٹ کرنے کی بجائے خود ان کی تلاش شروع کردی۔ بالآخر انہیں گجرات شہر سے پکڑلیا گیا اور واپس گاﺅں لایا گیا۔ گاﺅں لاکر ان کے اپنے قریبی عزیزوں نے انہیں برہنہ کیا اور اسی حالت میں پورے گاﺅں میں گھماتے رہے۔ اس دوران لڑکی اور لڑکے پر ظالمانہ تشدد بھی کیا جاتا رہا۔

شوہر کی اپنی بیگم کے ساتھ انتہائی شرمناک حرکت، بیوی نے چپکے سے ریکارڈنگ کرلی، کیا کررہا تھا؟ دیکھ کر جج کی بھی ہوائیاں اُڑگئیں
نوعمر جوڑے کے اپنے عزیز تو درندے بن ہی گئے تھے لیکن دیگر گاﺅں والے بھی پیچھے نہیں رہے۔ گاﺅں کے لوگوں کی بڑی تعداد گلیوںمیں جمع تھی جو برہنہ جوڑے کا تماشا دیکھتی رہی۔ حتیٰ کہ کچھ لوگوں نے موبائل فونز سے ان کی ویڈیوز بھی بنائیں اور پھر ان ویڈیوز کو سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے سے بھی نہیں ہچکچائے۔
نوعمر جوڑے کو نہ صرف اپنے گاﺅں میں بے پناہ تذلیل اور تشدد کا سامنا کرنا پڑا بلکہ ان کی ویڈیوز کی صورت میں پوری دنیا میں ان کی رسوائی ہورہی ہے۔ مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ بدترین تشدد کے بعد لڑکے کی حالت نازک ہے، جبکہ لڑکی پولیس کی تحویل میں ہے۔ پولیس نے لڑکی اور لڑکے کے والد اور گاﺅں کے دو دیگر افراد کو گرفتار کرلیا ہے، جبکہ مزید ملزمان کی تلاش جاری ہے۔