سشما سوراج اور بھارتی میڈ یا نے مل کر پاکستانی کا گھر اجاڑنے کے لیے سازشیں شروع کر دیں

ڈیلی بائیٹس

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے اپنے میڈ یا کے ساتھ مل کر یونس نامی پاکستانی کا گھر اجاڑنے کے لیے سازشیں شروع کردیں ۔پاکستانی شخص کی بھارتی بیوی کو گھریلو نا چاقی کے بعد واپس بھارت لانے کے لیے کوششیں تیز کردیں ۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں محمد اکبر نامی شخص نے یو ٹیوب پر سشما سوراج کو پیغام بھیجا کہ اس کی بیٹی کی ایک پاکستانی سے شادی ہوئی ہے ،بیٹی کے سسرال والے اس کے ساتھ برا سلوک کرتے ہیں ۔اس پر بات پر سشما سوراج نے بھارتی ڈراموں کی ”ولن ساس“کا کردار ادا کرتے ہوئے فوری طور پر نوٹس لیا اور اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر پیغام دیا کہ خاتون کی حفاظت کے لیے بھارتی ہائی کمیشن کے وفد کو بھیج دیا ہے اور اس کی جلد بھارت واپسی کے لیے بھی انتظامات کیے جا رہے ہیں ۔

دوسری جانب بھارتی میڈ یا نے بھی جلتی پر تیل چھڑکنے کا کام کیا اور پاکستانی خاندان کے خلاف پراپیگنڈا شروع کردیا ہے ۔بھارتی میڈ یا رپورٹس کے مطابق بھارتی خاتون محمدی بیگم نے اپنی والدہ ہاجرہ بیگم کو فون کر کے بتا یا کہ اس کے سسر ال والے برا سلوک کرتے ہیں ۔یونس اپنی بھارتی بیوی محمدی بیگم پر تشدد کرتا ہے اور اسے جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی دیتا ہے ۔
واضح رہے کہ یونس اور محمدی بیگم کے پانچ بچے ہیں جن میں سے 3بیٹے اور دو بیٹیاں ہیں ،سب سے چھوٹے بیٹے کی عمر نو سال ہے ۔پاکستانی لوگوں کا کہنا ہے کہ کئی سالوں سے شادی کے رشتے میں بندھے ہر جوڑے کی زندگی میں اتار چڑھاﺅ آتا رہتا ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ گھر کے جھگڑے میں حکومتیں بھی بیچ میں آجائیں ۔