دوران پرواز طیارہ تباہ لیکن عین آخری لمحے پر ایسا کام ہوگیا کہ اس میں سوار نوجوان لڑکی معجزانہ طور پر زندہ بچ گئی، ایسا کیا ہوا؟ جان کر آپ بھی کہیں گے جسے اللہ رکھے اسے کون چکھے

ڈیلی بائیٹس

لاس اینجلس (نیوز ڈیسک) ہوائی جہاز کے تباہ کن حادثے میں کسی کا زندہ بچ جانا ہی معجزے سے کم نہیں، کجا یہ کہ کوئی ایسے بچ جائے کہ جسم پر چند خراشوں کے سوا کوئی زخم بھی نہ ہو۔ یہ ناقابل یقین واقعہ امریکی شہر لاس اینجلس میں پیش آیا، جہاں ایک چھوٹا طیارہ ہزاروں فٹ کی بلندی سے زمین پر گر کر تباہ ہو گیا مگر اس میں سوار ایک نوعمر لڑکی بالکل محفوظ رہی۔
دی مرر کی رپورٹ کے مطابق طیارے میں دو بالغ اور تین نوعمر افراد سوار تھے۔ ریور سائڈ میونسپل ائیرپورٹ سے ٹیک آف کرنے کے کچھ وقت بعد ہی یہ طیارہ فنی خرابی کا شکارہوگیا اور رہائشی عمارتوں سے ٹکرا کر تباہ ہوگیا۔ طیارہ گرنے سے دو گھر بھی آگ کی لپیٹ میں آگئے۔ افسوسناک اتفاق دیکھئے کہ حادثے میں ہلاک ہونے والے ایک نوجوان کا گھر بھی تباہ ہونے والے گھروں میں شامل تھا۔

’مجھے ایسا لگتا تھا کہ میں ایک جانور کی طرح ہوں جسے تمیز سکھانے کی ضرورت ہے،جیسے جیسے وقت گزرتا گیامجھے یقین ہونے لگا کہ میرا شوہر مجھے صرف اس وقت مارتا ہے جب اس کا میرے لیے پیار عروج پر ہوتا ہے کیونکہ۔۔۔‘
طیارے میں موجو دچار افراد موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ ایک نوعمر لڑکی حیرتناک انداز میں محفوظ رہی۔ عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ جب طیارے گرا تو دو ٹکڑے ہو گیا، اور ایک لڑکی اس میں سے اچھل کر باہر گری۔ باقی افراد طیارے کے اندر ہی دم توڑ گئے، مگر باہر گرنے والی لڑکی کے جسم پر صرف چند خراشیں آئی تھیں۔ مقامی ایوی ایشن حکام کے مطابق تباہ ہونے والا طیارہ سیسنا 310 تھا۔ اس حادثے کی وجوہات جاننے کے لئے تحقیقات جاری ہیں۔