انٹرنیٹ پر محبت اور پھر پہلی ملاقات لیکن واپسی پر نوجوان لڑکا لڑکی کو پولیس نے روک لیا، یہ لڑکا دراصل کون تھا اور پولیس کو دیکھ کر اس نے فوری کیا کام کیا؟ ایسا خوفناک انکشاف کہ نوجوان لڑکی نے کبھی خوابوں میں بھی نہ سوچا تھا

ڈیلی بائیٹس

نیویارک (نیوز ڈیسک) بغیر کسی جان پہچان اور شناسائی کے اجنبیوں کے ساتھ رومانوی تعلقات استوار کرلینے والی خواتین کو اکثر غیر متوقع نتائج کا سامناکرنا پڑتا ہے، لیکن ایک امریکی خاتون کو بالکل اندازہ نہیں تھا کہ ایسی حماقت کس قدر صدمہ خیز ثابت ہو سکتی ہے۔
نیوز چینل WRBCکی رپورٹ کے مطابق اس خاتون نے ایک ایسے نوجوان سے ملنے کا فیصلہ کرلیا کہ جس کے بارے میں یہ کچھ بھی نہیں جانتی تھی۔ انٹرنیٹ پر علیک سلیک کے بعد خاتون جیس ایلن ایلیٹ نامی 22 سالہ نوجوان سے ملنے جا پہنچی، جو اسے اپنی گاڑی میں بٹھا کر نکل کھڑا ہوا۔ یہ دونوں ایک ہائی وے پر رواں دواں تھے کہ پولیس نے ان کی گاڑی کو روک لیا۔ پولیس کی پوچھ گچھ کے دوران جیس نے اپنی شناخت چھپانے کی کوشش کی جس پر اہلکاروں نے اسے باہر نکلنے کو کہا، مگر اس نے خود باہر نکلنے کی بجائے اپنے ساتھ بیٹھی خاتون کو باہر دھکا دیا اور گاڑی بھگا دی۔ اس غیر متوقع حرکت پر پولیس بھی بوکھلا گئی لیکن انہوں نے فوری طور پر فرار ہونے والے شخص کا تعاقب شروع کر دیا۔ مفرور شخص کچھ زیادہ ہی خطرناک نکلا اور انتہائی غیر ذمہ دارانہ ڈرائیونگ کرتے ہوئے پولیس کو ایسے چکر دئیے کہ دیکھتے ہی دیکھتے غائب ہو گیا۔

انٹرنیٹ پر محبت اور پھر شادی، لیکن دونوں لڑکا لڑکی کا آپس میں کیا تعلق تھا؟ ایک دن ایسی حقیقت سامنے آگئی کہ آدمی کو اپنی خوش قسمتی پر یقین نہ آئے
دوسری جانب خاتون پہلی رومانوی ملاقات میں ہی اپنے ساتھی ایسی بدسلوکی پر گہرے صدمے میں تھی۔ اس نے بمشکل پولیس کو قائل کیا کہ وہ مفرور ہونے والے شخص کی ساتھی نہیں بلکہ اس کے ساتھ پہلی رومانوی ملاقات کے لئے آئی تھی۔ بیچاری خاتون کی پریشانی اور پشیمانی کو دیکھ کر پولیس کو بھی رحم آگیا اور اسے جانے کی اجازت دے دی گئی، لیکن اس کی حالت تھی کہ وہ بے یار و مددگار سڑک کنارے کھڑی تھی کیونکہ اجنبی محبوب اسے سڑک پر پھینک کر فرار ہوگیا تھا۔ اس افسوسناک صورتحال کو دیکھتے ہوئے بالآخر پولیس نے ہی اسے گھر پہنچانے کا فیصلہ کیا، اور یوں آنکھیں بند کرکے محبت کی تلاش میں نکلنے والی یہ نادان خاتون پولیس کی گاڑی میں بیٹھ کر گھر پہنچی۔
مقامی پولیس کے چیف ڈپٹی رینڈی کرسٹین نے اس صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ”ان دونوں کا آغاز یقینا اچھا نہیں رہا۔“ ان کا مزید کہنا تھا کہ جیس ایلیٹ نامی شخص متعدد جرائم میں پولیس کو مطلوب تھا اور اس کا ڈرائیونگ لائسنس بھی منسوخ تھا مگر اس کے باوجود وہ ڈرائیونگ کررہا تھا۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ خوش قسمتی سے خاتون ابتداءمیں ہی اس کے چنگل سے آزاد ہوگئی ورنہ نجانے وہ اس کے ساتھ کیا سلوک کرتا۔