’معروف ریسٹورنٹ میں میرے شوہر نے مجھے شادی کی پیشکش کی جسے میں نے قبول کرلیا، لیکن درصل ہمارا شادی کا ارادہ نہ تھا بلکہ یہ تو صرف ریسٹورنٹ کو۔۔۔‘ نوجوان لڑکی نے ایسی بات کہہ دی کہ انٹرنیٹ پر طوفان آگیا

ڈیلی بائیٹس

نیویارک (نیوز ڈیسک) کسی مشہور ریسٹورنٹ سے مزیدار چاکلیٹ کیک اور ٹھنڈی ٹھار آئس کریم مفت کیسے کھائی جاسکتی ہے؟ یہ گر بتانے کی کوشش میں ایک امریکی لڑکی نے ایسا انکشاف کر ڈالا کہ سننے والے حیرت زدہ رہ گئے۔
میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 19 سالہ لڑکی کیٹی ڈومیٹرووک کا کہنا ہے کہ وہ اور اس کا 17 سالہ دوست ایلکس ناگلے گزشتہ چند دنوں سے بہت بور ہورہے تھے لہٰذا انہوں نے سوچا کہ کوئی دلچسپ کام کیا جائے۔ ایلکس اور کیٹی نے ایک منفرد منصوبہ بنایا اور ریاست ٹیکساس کے ایک مشہور ریسٹورنٹ جا پہنچے۔ جب کیٹی اٹھ کر واش روم گئیں تو ایلکس نے ویٹروں کو بتایا کہ وہ اپنی دوست کو شادی کی پیشکش کرنے والے ہیں لہٰذا سب لوگ ان کا ساتھ دینے اور تصاویر بنانے کے لئے تیار ہوجائیں۔ جیسے ہی کیٹی واپس آئی تو ایلکس نے اپنی جیب سے ہیرے کی انگوٹھی نکالی(جو کہ نقلی تھی)اور کیٹی کو شادی کی پیشکش کر ڈالی۔ کیٹی نے بھی شرماتے ہوئے ہاں کہہ دی، جس پر ریسٹورنٹ میں موجود سب لوگوں نے تالیاں بجا کر انہیں مبارکباد دی۔ اس کے ساتھ ہی ریسٹورنٹ نے اپنی روایت کے مطابق انہیں چاکلیٹ کیک اور آئسکریم مفت پیشکش کی، جس سے لطف اندوز ہونے کے بعد یہ خوشی خوشی رخصت ہو گئے۔

60 سالہ یورپی بڑھیا نے مسلمان نوجوان سے شادی کرلی، دولہا کی عمر کتنی ہے؟ ایسی خبر کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ برپاہوگیا، لوگوں کو اپنی آنکھوں پر یقین نہ آئے
ایلکس اور کیٹی نے اپنی شرارت کا انکشاف سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر کیا تو کچھ لوگ ان کی حکمت عملی سے متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے، البتہ اکثر نے ان پر تنقید کرتے ہوئے ان کے فعل کو بددیانتی قرار دیا۔اس تنقید کے باوجود کیٹی اور ایلکس کا کہنا ہے کہ وہ کسی اور ریسٹورنٹ میں جاکر ایک بار پھر یہی کھیل کھیلنا چاہتے ہیں، لیکن اگلی بار انہیں ریاست ٹیکساس سے باہر جانا ہوگا کیونکہ ٹیکساس میں ان کی حرکت کا چرچا عام ہو چکا ہے۔