پاکستانی فنکاروں کو بھارت آکر کام کرنا چاہیے : اجے دیوگن کی قلابازی

تفریح

ممبئی (آئی این پی) بالی ووڈ کے معروف اداکار جے دیوگن نے کہا ہے کہ پاکستانی فنکاروں کو بھارت میں آکر کام کرنا چاہیے۔

سنیپ چیٹ پر بھارتی وزیر اعظم کا کارٹون بنا کر ٹوئٹ کرنے پر معروف کامیڈین کے خلاف مقدمہ درج
بھارتی میڈیا کے مطابق حا ل ہی میں اجے دیوگن نے پاکستانی فنکاروں کے خلاف اپنے بیان پر یوٹرن لیتے ہوئے کہا ہے کہ پڑوسی ملک سے ہمارے تعلقات ابھی تک کشیدہ ہیں لیکن حقیقت تو یہ ہے کہ لوگ اب بھی پاکستانی فنکاروں کے ساتھ کام کرنا چاہتے ہیں لہذا یہ کہنا غلط نہیں ہوگا کہ ہماری انڈسٹری میں منافقت کا راج ہے۔ اجے کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب ان کی فلم بادشاہوریلیز کے لئے تیار ہے۔میڈیا کے مطابق اجے دیوگن کو اچانک پاکستانی فنکاروں سے اس لیے محبت ہوگئی ہے کیونکہ وہ اپنی فلم بادشاہو کی ریلیز کے وقت کسی قسم کی کوئی پریشانی نہیں چاہتے اور ان کی خواہش ہے کہ بادشاہو پاکستانی سینما گھروں میں بھی نمائش کے لیے پیش ہو۔ واضح رہے کہ اجے دیوگن نے گزشتہ برس مسلمانوں اور پاکستانی فنکاروں کے خلاف زہر اگلا تھا تاکہ ان کی فلم شیوے کو اے دل ہے مشکل کے مقابلے میں زیادہ پذیرائی ملے۔ انہوں نے کہا تھا کہ کرن جوہر کو اپنی فلم اے دل ہے مشکل میں پاکستانی اداکار فواد خان کو کاسٹ نہیں کرنا چاہئے تھا۔ اگر ان سے یہ غلطی ہو ہی گئی ہے تو انہیں فورا فواد خان کو فلم سے نکال کر اپنی غلطی کو سدھار لینا چاہئے۔ انہوں نے پاکستانی فنکاروں سے اپنی نفرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ مستقبل میں کبھی بھی پاکستانی فنکاروں کے ساتھ کام کرنا نہیں چاہیں گے۔