بالی ووڈ کی وہ خوبرو اداکارہ جس نے حاملہ ہونے کے باوجود فلم میں ریپ سین عکسبند کرایا، شوٹنگ کے بعد اداکارہ کا کیا حال ہوا؟ جان کر آپ بھی کانوں کو ہاتھ لگا لیں گے

تفریح

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) فلموں میں حقیقت کا رنگ بھرنے کیلئے اداکار مختلف طرح کے ٹوٹکے آزماتے ہی رہتے ہیں لیکن بالی ووڈ کی ایک اداکارہ ایسی بھی ہیں جنہوں نے دوران حمل فلم کیلئے ’ریپ‘ کا سین فلمبند کرایا ۔ سین کی شوٹنگ کے دوران اداکارہ کو شدید کرب سے گزرنا پڑا جس کی وجہ سے وہ نہ صرف کافی دیر تک روتی رہیں بلکہ انہیں الٹیاں بھی لگ گئیں۔

”اوم پوری مرنے کے بعد یہ ایک کام کر رہے ہیں۔۔۔“ عامر لیاقت نے نیا شوشہ چھوڑ دیا، ویڈیو دکھا کر ایسا دعویٰ کر دیا کہ سوشل میڈیا صارفین کیلئے ہنسی پر قابو رکھنا مشکل ہو گیا
بھارتی میڈیا کے مطابق ماضی کی معروف اداکارہ موشمی چیٹرجی 26 اپریل کو 68 ویں سالگرہ منانے جا رہی ہیں۔ انہوں نے بے شمار فلموں میں لازوال کردار ادا کرکے لاکھوں لوگوں کے دلوں میں گھر کیا۔ 1974 میں بننے والی فلم روٹی ، کپڑا اور مکان میں اداکارہ موشمی چیٹرجی نے ریپ کا شکار ہونے والی ایک بھارتی لڑکی تلسی کا کردار ادا کیا تھا۔ فلم کی شوٹنگ کے دوران جب ریپ کا سین ریکارڈ کرایا جانا تھا تو اس وقت موشمی چیٹرجی حاملہ تھیں۔

سدھارتھ ملہوترا کے گھر پر پارٹی ، عالیہ بھٹ نے آدھی رات کو واپسی کیلئے اپنے گارڈ کو بلالیا لیکن گاڑی میں بیٹھتے ہی ایسا انکشاف کہ پیروں تلے سے زمین ہی نکل گئی کیونکہ ۔ ۔ ۔
ریپ سین کی شوٹنگ ایک گودام میں کی گئی جہاں کئی لوگوں کے ساتھ یہ سین فلمبند کیا گیا، اس دوران ساتھی اداکاروں کی جانب سے موشمی کو سکرپٹ کے مطابق جب اٹھا کر آٹے کی بوریوں پر پٹخا گیا تو انہیں شدید تکلیف کا سامنا کرنا پڑا۔ ان کے پورے جسم اور بالوں پر آٹا چپک گیا جبکہ کچھ آٹا ان کے گلے میں بھی پھنس گیا۔ سین کی شوٹنگ کے دوران حاملہ موشمی کو کافی کھینچا تانی کا بھی سامنا کرنا پڑا ۔


موشمی چیٹرجی نے ماضی میں دیے گئے ایک انٹرویو کے دوران اعتراف کیا تھا کہ یہ سین فلمبند کرانا ان کی زندگی کا بد ترین لمحہ تھا کیونکہ ان کے جسم پر چپکنے والا آٹا ہٹاتے ہٹاتے رات کے چار بج گئے تھے جبکہ فلم کی شوٹنگ کے دوران ہونے والی تکلیف کے باعث وہ کافی دیر تک روتی بھی رہیں اور انہیں الٹیاں بھی لگ گئی تھیں۔