اسرائیل پورے یروشلم میں تعمیرات کرتا رہے گا،نیتن یاہو

عالمی منظر


مقبوضہ یروشلم(ثناءنیوز)اسرائیلی وزیرا عظم بنجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اسرائیل پورے یروشلم میں یہودی بستیوں کی تعمیر جاری رکھے گا۔ نیتن یاہو نے اس امر کا اظہار فلسطین کے زیر قبضہ علاقے مشرقی یروشلم میں یہودیوں کے لیے ایک ہزار گھروں کے تعمیراتی منصوبے کا اعلان کیے جانے کے بعد کیا ہے۔دوسری جانب فلسطینی عوام مشرقی یروشلم کے اس علاقے کو اپنی مجوزہ آزاد ریاست کا حصہ قرار دیتے ہیں۔عالمی برادری بھی مقبوضہ علاقوں میں اس تعمیراتی منصوبے کی حامی نہیں ہے۔بنجمن نیتن یاہو نے اسرائیلی پارلیمنٹ سے خطاب کے دوران متنازعہ یہودی بستییوں کے منصوبے کا دفاع کرتے ہوئے کہا '' اس منصوبے پراسرائیل میں کامل اتفاق پایاجاتا ہے، اس لیے یروشلم کے پورے شہر میں تعمیرات جاری رہیں گی۔''بنجمن نیتن یاہو کا یہ بھی کہنا تھا '' فلسطینی یہ جانتے ہیں کہ انہیں کسی منصوبے کے تحت اقتدار مل بھی گیا تو مشرقی یروشلم کا علاقہ اسرائیل کے کنٹرول میں ہی رہے گا۔''اسرائیلی وزیر اعظم نے مزید کہا '' جس طرح فرانس والے پیرس میں تعمیرات کرتے ہیں ، برطانیہ والے لندن میں کرتے ہیں۔
 اسی طرح اسرائیل یروشلم میں تعمیرات کر سکتا ہے ، کون ہے جو یہودیوں کویروشلم چھوڑنے کے لیے کہہ سکتا ہے۔''واضح رہے مشرقی یروشلم اس ناطے ایک حساس شہر ہے کہ اس میں یہودی اور عیسائی بھی رہتے ہیں اور یہ مسلمانوں کے قبلہ اول کا گہوارہ بھی ہے۔اسرائیل پورے شہر کو اپنا دارالحکومت بنانے کا حامی ہے، لیکن اسرائیل کے سب سے اہم اتحادی امریکا سمیت بہت سے ممالک مشرقی یروشلم کو اسرائیل کا حصہ نہیں مانتے ہیں۔#