وفاق نے سندھ حکومت کے خلاف متعصبانہ رویہ اختیار کر رکھا ہے ،شرجیل میمن

صفحہ اول

                                     کراچی(اے این این)وزیر اطلاعات سندھ شرجیل میمن نے پیپلز پارٹی کے دور میں یوسف رضا گیلانی اور مخدوم امین فہیم کے مقدمے کا الزام بھی موجودہ حکومت پر عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاق نے سندھ حکومت کے خلاف متعصبانہ رویہ اختیار کر رکھا ہے،عوام کو انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے،لائن لاسز لاہور میں ہیں اور لوڈ شیڈنگ سندھ کے عوام پر مسلط کر دی گئی ہے،ہمارے صوبے کو اپنا حصہ بھی نہیں دیا جا رہا۔کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شرجیل انعام میمن کا کہنا تھا کہ سندھ کا جتنا شیئر ملنا چاہئے وہ سندھ کو نہیں مل رہا۔ سندھ کا حصہ نہ ملنے کے باعث امن و امان سمیت مختلف امور میں مسائل کا سامنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بجٹ میں سندھ کے مرکزی پراجیکٹس کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ سب سے زیادہ ریونیو دیتا ہے مگر اسے ہی نظر انداز کیا جارہا ہے۔ جتنی لوڈ شیڈنگ سندھ میں آج کی جارہی ہے اتنی پاکستان کی تاریخ میں نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر لائن لوسز کی بات کرتے ہیں، سب سے زیادہ لائن لوسسز لاہور میں ہورہے ہیں وہاں 50 فیصد لائن لوسسز ہیں جبکہ لاہور کی رپورٹ کو چھپا دیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی آپریشن میں وفاقی حکومت کی جانب سے ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا گیا۔ سندھ حکومت نے پولیس کے سامان کا مطالبہ کیا مگر ایک روپے کی مدد بھی نہیں کی گئی۔انھوں نے کہا کہ ن لیگ کی قیادت نے اپنے خلاف احتساب کے مقدمات ختم کرا لیے لیکن یوسف گیلانی، مخدوم امین کے وارنٹ جاری کر دیئے۔ پیپلزپارٹی نون لیگ کی حکومت کے سامنے نہیں جھکے گی، احتجاج کا راستہ نہیں اپنانا چاہتے۔ شرجیل میمن کا کہنا تھا کہ ن لیگ ہر جمہوری حکومت کے خلاف سازش کا حصہ رہی ، لاہور کو پاکستان سمجھنے والوں نے ماضی سے کوئی سبق نہیں سیکھا، نواز شریف کا پرویز مشرف کے ساتھ این آر او ہو گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کراچی جیسا ٹارگٹڈ آپریشن سندھ کے دیگر شہروں میں بھی کیا جائے گا۔