دہشت گردی کے تازہ واقعات وفاقی حکومت کی ناکامی کا ثبوت ،وزیر داخلہ چوہدری نثار کہیں نظر نہیں آ رہے:مولابخش چانڈیو

حیدرآباد

حیدرآباد(صباح نیوز)اکستان پیپلز پارٹی رہنما  مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت قومی سلامتی پالیسی پر عمل پیرا نہیں ہے جس کے باعث ملک میں بزرگان دین کی درگاہوں پر بھی خودکش حملے ہو رہے ہیں ، قلندر کی نگری ایک مقدس جگہ ہے ، دہشت گردی کے تازہ واقعات وفاقی حکومت کی ناکامی کے ثبوت ہیں،وزیر داخلہ کہیں نظر نہیں آ رہے ،رحمان ملک اچھے تھے جو مشکل گھڑی میں نظر تو آتے تھے۔

سول ہسپتال حیدرآبامیں  سیہون دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد  کی عیادت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ  ملک میں  جہاں پر بھی کوئی افسوس ناک واقعہ پیش آتا ہے تو وزیر داخلہ نظر نہیں آتے، وزیر اعظم پا کستان کو آج سیہون دھماکے کے زخمیوں کی عیادت کرنا چاہئے تھی ، موجودہ وزیر داخلہ سے تو سابقہ وزیر داخلہ رحمان ملک اچھے تھے جو مشکل گھڑی میں نظر تو آتے تھے،  دہشت گردی کے تاذہ واقعات وفاقی حکومت کی ناکامی کے ثبوت ہیں۔انہوں نے کہا کے دہشتگردی کے واقعات روز کا معمول بن چکے ہیں اور سیکیورٹی ادارے صرف افسوس کر کے جان چھڑاتے رہتے ہیں ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ ذمہ دار انسان ہیں ، انہوں نے رات کو ہی زخمیوں کے لئے ایمبولنسز ادویات اور دیگر ضروری اشیا فراہم کیں اور دھماکے میں شہید اور زخمی ہونے والے لوگوں کو اپنی اصل جگہ پہنچانے کی پوری کوشش بروئے کار لائی جائے گی،   پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوام کا ساتھ دیا ہے اور ہر مشکل گڑی میں عوام کے ساتھ رہے گی۔