روسی صدر پیوٹن کے خفیہ گھر کی تصاویر منظر عام پر آگئیں، مغربی ممالک کی جاسوسی سے بچنے کیلئے چھت پر کیا عام سی چیز لگارکھی ہے؟ جان کر آپ کی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

بین الاقوامی

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روسی صدرولادی میر پیوٹن کا خاندان، ان کی دولت، کاروبار، معاملات غیر ہر چیز پرانتہائی اسراریت کی حامل ہے۔ گاہے پیوٹن اور ان کے خاندان کے متعلق ایسی خبریں آتی ہیں کہ دنیا حیران رہ جاتی ہے۔اب ان کے ایک خفیہ گھر کی تصاویر منظرعام پر آ گئی ہیں، جسے مغربی ممالک کی جاسوسی سے بچانے کے لیے ایسا اہتمام کیا گیا ہے کہ آپ دنگ رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ولادی میر پیوٹن کا یہ گھرروس کے شمالی علاقے کاریلیا میں ہے اور پہاڑیوں میں خفیہ طریقے سے بنایا گیا ہے۔ اس کی چھت پر گھاس اگائی گئی ہے تاکہ مغربی ممالک کی جاسوس سیٹلائٹس کی نظروں سے اوجھل رہ سکے۔

روس نے ایک عام سی گاڑی کو لے کر ایسا ریکارڈ بنادیا کہ جان کر تمام دنیا کے لئے یقین کرنا مشکل ہوگیا
اس خفیہ گھر کے قریب ہی ہیلی پیڈ بنایا گیا ہے اور مقامی افراد کا کہنا ہے کہ پیوٹن ہیلی کاپٹر پر ہی یہاں آتے ہیں۔ بعض کا کہنا ہے کہ انہوں نے یہ گھر اپنی بیٹی کے لیے وقف کر رکھا ہے۔ تاہم رپورٹ دعویٰ کیا گیا ہے کہ اس گھر کی 24گھنٹے کڑی نگرانی کی جاتی ہے اور جب کبھی روسی صدر کو عوام کی نظروں سے اوجھل ہو کر وقت گزارنا ہوتا ہے، جیسا کہ رواں سال جولائی میں گزارا، تب وہ یہاں آتے ہیں۔ یہ گھر ولادی میر پیوٹن کے ایک دیرینہ دوست کی ملکیتی زمین پر بنایا گیا ہے۔ پیوٹن کی اس شخص سے دوستی اس وقت سے ہے جب یہ سینٹ پیٹرزبرک کے نائب میئر ہوا کرتے تھے۔

واضح رہے کہ پہلی بار اس خفیہ گھر کی تصاویر روس کے ٹی وی چینل ”رین ٹی وی“نے نشر کی تھیں اور اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ ”ہمارے ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ یہ گھر پیوٹن کے لیے تعمیر اور ڈیزائن کیا گیا تھا۔ یہاں دراصل دو گھر ہیں جن میں سے ایک گھاس سے ڈھکا ہوا ہے۔ یہاں ایک چھوٹی سی جھیل بھی موجود ہے۔ مقامی حکومت اس گھر کو ”وفاق کی جگہ“ کہتی ہے۔“ روسی ٹی وی نے اس سلسلے میں ولادی میر پیوٹن کے ترجمان سے بھی رابطہ کیا تاہم انہوں نے ردعمل دینے سے انکار کردیا۔